بلوچ نیشنل موومنٹ

بلوچ نیشنل موومنٹ 2002 کو وجود میں آیا اور یہ جماعت آزاد بلوچستان کی لیے سیاسی جدوجہد پر یقین رکھتی ہے۔ اس جماعت کا سربراہ غلام محمد بلوچ تھا جسے پاکستانی عسکری اداروں کے اہلکاروں نے اپریل 2009 کو تربت میں ان کے وکیل کے دفتر سے جماعت کے مرکزی رہنما لالا منیر اور بلوچ ریپبلکن پارٹی کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل شیر محمد بلوچ کے ہمراہ اغوا کیا تھا۔ تینوں بلوچ رہنماوں کی تشدد زدہ مسخ شدہ لاشیں چھ روز بعد بلوچستان کے علاقے تربت سے برآمد ہوئیں۔ بی این ایم بلوچستان سمیت بیرون ممالک میں آزاد بلوچستان کے قیام کے لیے اپنی سرگرمیاں جاری رکھی ہوئی ہے۔ خلیل بلوچ اس جماعت کا موجودہ چیئرمین ہے۔

Close