جرمنی سے ملک بدری پر تین بلوچ کراچی ایئرپورٹ سے لاپتہ

کراچی(ریپبلکن نیوز)جرمنی سے ملک بدری پر تین بلوچ فرزند کراچی ایئرپورٹ سے ایف آئی اے کے ہاتھوں گرفتاری کے بعد لاپتہ ہوگئے ہیں۔

نعیم ولد حاجی چاکر،  قابوس ولد عبدالکریم بلوچ اور علی حسن نے خود پاکستان جانے کا فیصلہ کیا تھا جس پر جرمن حکام نے عمل در آمد کرتے ہوئے ڈلسر،کیچ کے رہائشی نعیم،  چاکر اور علی حسن کو ملک بدر کر دیا تھا۔

تینوں افراد کو 14مئی 2016ء جرمنی کے وقت کے مطابق 16:30منٹ پر ملک بدر کر دیا گیا تھا جو کراچی ایئر پورٹ پہنچنے کے بعد پُراسرار طورپر لاپتہ ہوگئے ہیں۔

جبکہ انکے رشتے دار انہیں لینے کراچی ایئر پورٹ بھی پہنچ گئے تھے جنہوں نے ایف آئی کے اہلکاروں کو انکی رہائی کے لیے بھاری رقم بھی ادا کی ہے ۔جس کے باوجود تینوں افراد کو فیڈرل ا ینویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) نے گرفتاری کے بعد لاپتہ کر دیا ۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ تینوں افراد کو پاکسانی خفیہ اداروں کے حوالے کیا گیا ہے جنہیں طویل مدت گزرنے کے باوجود قید میں رکھا گیا ہے جن کی زندگیوں کو شدید خطرات لاحق ہیں۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close