بلوچستان لبریشن فرنٹ نے فورسز پر حملے کی ذمہ داری قبول کر لی

کوئٹہ(ریپبلکن نیوز)بلوچستان لبریشن فرنٹ کے ترجمان گہرام بلوچ نے پاکستانی فوج پر حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے نامعلوم مقام سے سیٹلائٹ فون کے ذریعے کہا کہ جمعرات کو سرمچاروں نے بالگتر کے علاقے سری گڈگی میں پاکستانی آرمی کے قافلے پر حملہ کرکے بھاری جانی و مالی نقصان پہنچایا۔ بالگتر ہی میں سہاکی ہائی اسکول پہ قائم فوج اور ایف ڈبلیو او کی کیمپ پر راکٹ اور بھاری ہتھیاروں سے حملہ کرکے بھاری نقصان پہنچایا۔ حملے میں شدید نقصان سے حواس باختہ ہوکر قابض فوج نے سری گڈگی میں عام آبادی کی جانب کئی مارٹر فائر کئے۔ اس سے پہلے بھی پاکستانی آرمی نے عام آبادی کو نشانہ بنا یا ہے تاکہ مقامی لوگ علاقہ خالی کرنے پر مجبور ہوجائیں۔کیونکہ انہی علاقوں سے چین کے ساتھ معاہدوں کے تحت سڑک کی تعمیر جاری ہے۔ مگر بلوچ قوم ان بلوچ کش منصوبوں کو مسترد کر چکی ہے۔ ان منصوبوں کے تحت بلوچ قوم کی آبادی سے کئی گنا زیادہ غیر بلوچوں کو بلوچستان میں آباد کرکے بلوچوں کو اپنی ہی سرزمین پر اقلیت میں تبدیل کرنے کی دشمن کی مذموم سازشیں ہیں ۔ ساتھ ہی ظالمانہ فوجی آپریشنوں، مارو اور پھینکو اور جعلی مقابلوں کے ذریعے بلوچ نسل کشی کی جا رہی ہے۔ جس کا مقصد بلوچ قوم کو نیست و نابود کرکے بلوچستان کے وسائل کو لوٹنا ہے۔ ہمارے سرمچار ہر محاذ پر دشمن ریاستی فوج کا بھر پور جواب دینے کے لیے ہمہ وقت تیار ہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close