شہدائے مستونگ شہید ڈاکٹر منان اور انکے ساتھیوں کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہیں۔ بی آر ایس او

کوہٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچ ریپبلکن اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے آرگنائزنگ باڈی کے ترجمان نے اپنے جاری کردہ بیان میں بلوچ نیشنل موومنٹ کے رہنماء شہید ڈاکٹرمنان بلوچ اورانکے ساتھیوں کو انکی پہلی بھرسی پر خراجِ تحسین پیش کیا۔ترجمان نے کہا کہ پاکستانی مسلح افواج نے بلوچ سیاسی رہنماء ڈاکٹر منان بلوچ کو مستونگ میں واقع بی این ایم کے ایک سینئر کارکن اشرف بلوچ کے گھر میں نشانہ بنایا جہاں شہید ڈاکٹر منان کے ساتھ انکے ہم خیال ساتھی بابو نوروز، اشرف بلوچ، حنیف بلوچ اورساجد بلوچ موجود تھے جنہیں پاکستانی افواج نے بڑی بے دردی سے شہید کر دیا۔
ترجمان نے مزید کہا کہ بلوچ سیاسی رہنماؤں اور کارکنوں کے قتل و اغواء سے بلوچ قوم کی پر امن تحریک کو کچلنا ممکن نہیں۔ہزاروں کارکنوں اور رہنماؤں کی شہادت اور اغواء کے باوجود بلوچ قومی تحریک اپنی منزل کی طرف گامزن ہے ، ریاستی مظالم ، ظلم و جبر ، اغواء و شہادتیں بلوچ قوم کو انکے حقوق کے مطالبے سے دستبردار نہیں کرسکتے۔
ترجمان نے بلوچ نیشنل موومنٹ کے مر کزی رہنماء ڈاکٹر منان بلوچ اور انکی ساتھیوں کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ بلوچ قوم کی تاریخ شہادتوں سے بھری پڑی ہے ، شہید نواب اکبر خان، شہید ڈاکٹر منان، شہید شیر محمد، شہید غلام محمد، شہید سنگت ثناء ، شہید جلیل ریکی ، شہید احمد داد،شہید قمبر چاکر جیسے سینکڑوں سیاسی رہنماؤں کو ریاستی فورسز اور خفیہ اداروں کے اہلکاروں نے جسمانی طورپر ہم سے جدا کر دیا ہے ۔بلوچ رہنماؤں کی شہادتوں سے جو خلاء پیدا ہوئی ہے شاہد وہ صدیوں تک پُر نہ ہوں ، لیکن ہمیں تمام شہداء کے نقش قدم پر چلتے ہوئے انکے مشن کو پایہ تکمیل تک پہنچانا ہے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close