ایران مزاحمت کاروں کو اسلحہ مہیا کر رہا ہے ۔ رکن افغان پارلیمان

نیوزڈیسک (ریپبلکن نیوز) ایران پر افغانستان میں طالبان مزاحمت کاروں کو اسلحہ مہیا کرنے کے الزام کا اعادہ کیا گیا ہے۔طالبان نے کابل میں حکومت اور اس کے تحت سکیورٹی فورسز کے خلاف گذشتہ سترہ سال سے جنگ برپا کر رکھی ہے اور وہ ان کے خلاف مختلف ممالک کا ساختہ اسلحہ استعمال کررہے ہیں۔

افغان میڈیا کے مطابق ایران پر یہ نیا الزام پارلیمان کے ایک رکن کرم الدین رضا زادہ نے عاید کیا ہے۔انھوں نے کہا ہے کہ طالبان وسطی صوبے غور میں افغان فورسز کے خلاف جنگ میں ایرانی ہتھیار استعمال کررہے ہیں۔

کرم الدین پارلیمان میں غور ہی کی نمائندگی کرتے ہیں۔انھوں نے بتایا کہ ان کے صوبے میں ایک پاپولر پیپلز فورس نے ایک گرفتار طالبان سے ایرانی ساختہ ہتھیار برآمد کیے ہیں۔طالبان نے گذشتہ دو ہفتے سے اس صوبے کے دارالحکومت فیروز کوہ کے مغرب میں واقع علاقے میں سرکاری فوج کے خلاف حملے تیز کررکھے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close