بھاگ میں گیس لائن اڑانے، کیچ میں فورسز و منشیات فروشوں پر حملوں کی زمہ داری بی آر اے نے بلوچ کر لی

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچ ریپبلکن آرمی کے ترجمان سرباز بلوچ نے میڈیا کو جاری بیان میں کہا ہے کہ بلوچ سرمچاروں نے گزشتہ منگل کے روز ڈیرہ بگٹی کے علاقے زین کوہ میں کنواں نمبر 6 سے لوٹی گیس فیلڈ کو جانے والی 16 انچ قطر گیس پائپ لائن کو دھماکہ خیز مواد سے تباہ کردیا۔جس لوٹی گیس فیلڈ کو گیس کی سپلائی مکمل طور پر بند ہوگئی۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ گزشتہ شب بلوچ ریپبلکن آرمی کے سرمچاروں نے ضلع بولان کے علاقے بھاگ میں جلال ھان ندی میں اُوچ گیس فیلڈ سے کوئٹہ کو گیس فراہم کرنے والی سولہ انچ قطر کی گیس پائپ لائن دھماکہ خیز مواد نصب کر کے اڑا دیا۔

سرباز بلوچ  نے مزید کہا ادھر کولواہ کے علاقے گور کوپ میں بلوچ ریپبلکن آرمی کے سرمچاروں نے پاکستانی فضائیہ کے جاسوس ڈرون طیارے کو اس وقت سنائپرز اور دیگر چھوٹے ہتھیاروں سے نشانہ بنایا جب وہ ہمارے ساتھیوں کے بلکل قریب سے نگرانی کررہا تھا۔ جس سے ڈرون طیارے کو شدید نقصان پہنچا اور وہ لڑکھڑاتے ہوئے فوراً واپس چلا گیا۔
ترجمان نے کہا کہ 21 دسمبر کو بی آر اے کے سرمچاروں نے تمپ کے علاقے ملانٹ میں فورسز کے پیدل گشتی ٹیم کو اس وقت خودکار ہتھیاروں سے نشانہ بنایا جب وہ سول آبادیوں کے خلاف آپریشن میں مصروف تھے۔اس حملے میں فورسز کے متعدد اہلکار ہلاک و زخمی ہوئے۔
بلوچ ریپبلکن آرمی کے ترجمان نے کہا کہ بی آر اے  سرمچاروں نے 20دسمبر کو منشیات فروشوں کے قافلے پر زامران کے علاقے سورگ میں حملہ کیا اس حملے میں ان کا ایک کارندہ عامر ہلاک ہوا۔ہم نے متعدد بار منشیات کے ڈیلروں کو وارنگ دی تھی کہ ہم بلوچ سرزمین کو منشیات کا اڈہ و روٹ ہر گز بننے نہیں دینگے لیکن وہ اپنے مزموم مقاصد میں اب بھی باز نہیں آرہے ہیں ان کے اہم سرغنہ حاجی رفیق اور حاجی حسن آئی ایس آئی کے گود میں بیٹھ کر زامران، پروم پنجگور اور گرد نواح کے نوجوانوں کی معاشی مجبوریوں سے فائدہ اٹھاکر ان کو معمولی رقم کے عوض ان کے ہاتھ میں بندوق تھماکر ان سے یہ مزموم کام کروارہے ہیں ڈرگ کے کارندوں کے پروم و زامران میں ایجنٹ جن میں نادل پرومی ملک محمد پرومی ایوب زامرانی انور زامرانی سمیت ان تمام کارندوں کو ہم آخری وارنگ دیتے ہیں کہ اگر انہوں نے اپنا زہر کا یہ دھندا جاری رکھا تو ان کو براہ راست نشانہ بنایا جائیگا۔ ہماری کاروائیاں بلوچستان کی مکمل آزادی تک جاری رہینگے۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close