مولانا احتشام الحق اور انکے بیٹے کے قتل پر افسوس ہے۔مولانا عبدالحمید

زاہدان (ریپبلکن نیوز) اہل سنت مغربی بلوچستان کے ممتاز دینی شخصیت شیخ الاسلام مولانا عبدالحمید نے مولانا احتشام الحق اور ان کے بیٹے کے ہدفی قتل پر گہرے رنج و غم اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کے اہل خانہ، تلامذہ اور متعلقین سے تعزیت کا اظہار کیا۔

یاد رہے صوبہ بلوچستان کے معروف عالم دین اور مفتی مولانا احتشام الحق بیٹے سمیت اتوار چوبیس جولائی کی شام کو ضلع کیچ میں آسیاآباد سے کلاہو جاتے ہوئے نامعلوم دہشت گردوں کی فائرنگ سے شہید ہوگئے۔

مولانا عبدالحمید نے کہا کہ معصوم لوگوں کا قتل ایک بری حرکت ہے جو قابل مذمت ہے، لیکن اس فعل کی برائی و قباحت اس وقت دوگنا ہوتی ہے جب ایک عالم دین کی جان لی جائے۔ممتاز اور مجاہد عالم دین، ’جامعہ رشیدیہ‘ آسیاآباد کے بانی و مہتمم مولانا مفتی احتشام الحق آسیا آبادی اور ان کے صاحبزادے کی شہادت کی خبر سن کر مجھے سخت صدمہ ہوا۔
مولانا احتشام الحق رحمہ اللہ اعلی پایہ کے محقق اور خیرخواہ عالم دین تھے جنہوں نے بلوچستان کے عوام کو بڑی علمی خدمات کا تحفہ پیش کیا۔ مختلف فکری مسائل اور عقائد کے حوالے سے ان کی رہ نمائی نے حقیقت کے پیاسوں کو سیراب کیا۔
مولانا عبدالحمید نے اپن غم و رنج کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں پر مولانا احتشام الحق رحمہ اللہ کے اہل خانہ، رشتے داروں، طلبہ اور متعلقین سے تعزیت و ہمدردی کا اظہار کرتاہوں اور ان کے غم میں برابر شریک ہوں۔ اللہ تعالی سے دعا ہے اس عظیم عالم دین اور ان کے بیٹے کی مکمل مغفرت فرمائے اور پس ماندگان کو اجر و صبر سے نوازے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close