بی این ایم کا جنوبی کوریا میں احتجاجی مظاہرہ

بوسان(ریپبلکن نیوز)بلوچ نیشنل موومنٹ کے مرکزی ترجمان نے کہا کہ بلوچستان پر قبضے کے دن جنوبی کوریا میں مظاہرہ اور یوم سیاہ منایا گیا۔ 27 مارچ کو جنوبی کوریا کے شہر بوسان میں بی این ایم جنوبی کوریا کے صدر نصیر بلوچ کی سربراہی میں بی این ایم کے کارکناں نے ایک پر ہجوم مقام پر احتجاج کیا، پلے کارڈز اُٹھائے اور پمفلٹ تقسیم کئے۔ مقامی لوگوں کو پمفلٹ اور باہمی تبادلہ کے ذریعے بلوچستان پر پاکستانی قبضہ کے بارے میں معلومات دی گئیں۔ اور 69 سالہ قبضہ کے دوران پاکستانی فورسز کے مظالم اور پاکستان کی عالمی دہشت گردانہ پالیسیوں کے بارے میں آگاہی دی۔ شرکاء نے کہا کہ پاکستان نے جس طرح عالمی مطلوب ترین شخص اُسامہ بن لادن کو فوجی چھاؤنی میں پناہ دی، اسی طرح ملا عمر اور ملا منصور اختر بھی پاکستان ہی میں سہولیات سے لطف اندوز ہوکر پوری دنیا میں دہشت گردی پھیلاتے رہے۔ پاکستان کی یہ پالیسی اب بھی جاری ہے۔ مظاہرین نے پلے کارڈز اور بینر اُٹھائے ہوئے تھے، جن پر بلوچستان میں پاکستانی مظالم کے بارے میں نعرے اور فوجی بربریت کی تصویریں آویزاں تھیں۔ جنوبی کوریا کے قائدین نے عزم کیا کہ کوریا کے عوام اور حکومت کو ان مظالم کے بارے میں معلومات فراہم کرتے رہیں گے تاکہ مہذب ممالک کو پاکستان کی وحشت اور مظالم کا علم ہوکر وہ خطے میں دہشت پھیلانے والوں کے بجائے انسانیت دوست قوتوں کی حمایت کریں۔ 

مزید خبریں اسی بارے میں

Close