میرے اور پارٹی رہنماؤں کے خلاف ریڈ وارنٹ کا اجرا، ریاست پاکستان کی زہنی شکست کی واضح مثال ہے ۔ نواب براہمدغ بگٹی

جنیوا ( نیوز ڈیسک) نواب براہمدغ بگٹی نے پاکستانی حکومت کی جانب سے ان کے اور پارٹی کے دیگر رہنماؤ کے ریڈ وارنٹ کے اجرا پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے سماجی رابطے کی ویب سائیٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں کہا ہے میرے اور پارٹی رہنما کے خلاف ریڈر وارنٹ کے اجرا کی منظوری سے یہ صاف واضع ہوگیا ہے کہ پاکستانی ریاست ہماری جمہوری جدوجہد سے مکمل طور پر زہنی شکست کھا چکا ہے ان کا کہنا تھا کہ ایک طرف پاکستانی حکومت دعواع کرتی ہے کہ مجھے بلوچستان میں عوام کی حمایت حاصل نہیں ہے وہی دوسرے طرف مزاحمتی عمل کی سربراہی کا الزام بھی مجھ پر عائد کرتی ہے انھونے مزید کہا کہ قبضہ گیر پاکستانی حکومت میرے خلاف ریڈ وارنٹ جاری کرنے سے یا پھر ہمارے قوم پر ظلم و بربریت کے زریعے سے ہمارے جمہوری تحریک کو خاموش یا دبا نہیں سکتا۔ بلکہ دنیا پاکستان، اس کے دوغلے پن اور بلوچستان میں جاری سنگین جنگی جرائم کے متعلق اب بہتر انداز میں جان رہی ہے اور میرے خلاف ریڈ وارنٹ بھی پاکستانی حکمرانوں کے زہنی اخترا کی نشانی ہے، نواب بگٹی کا مزید کہنا تھا کہ انٹرپول کوئی دہشت گرد گروہ نہیں ہے جسے پاکستان ہماری جہوری جدوجہد کو دبانے کیلئے اسعتمال کریگا بلکہ وہ ایک عالمی زمہ دار ادارہ ہے۔ 

یاد رہے کہ آج پاکستان کے وزارت داخلہ کی جانب سے بلوچستان کے قوم پرست رہنما اور بلوچ ریپبلکن پارٹی کے سربراہ نواب براہمدغ بگٹی اور پارٹی کے مرکزی ترجمان شیر محمد بگٹی کے خلاف ریڈ وارنٹ کے اجرا کی منظوری دی تھی۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close