سندھ میں جدوجہد کرنے والی جماعتیں اپنا موقف واضح کریں۔ شفیع برفت

جرمنی (ریپبلکن نیوز) جئے سندھ متحدہ محاز کے چیئرمین شفیع برفت نے ریپبلکن نیوز کو ارسال کردہ اپنے ایک بیان مٰں کہا ہے کہ سندھ، بلوچستان اور پشتونستان میں قومی تحریکوں کی جدوجہد کے پاداشت میں وہاں سیاسی و قومی کارکنوں کو ماوراۓ عدالت قتل کرنے، ان کو جبری طوپر لاپتہ کرنے ، خفیہ ایجنسیوں کے ٹارچر سیلون میں ان پر غیر انسانی تشدد کرنے، انسانی حقوق کی پامالی کرنے مظلوم قوموں کی قومی نسل کشی کرنے اور تاریخی قوموں کی سیاسی، قومی، تاریخی بحالی کی سیاسی جدوجہد کے خلاف ریاستی تشدد اور دہشگردی کو فورن بند کرکے فوج ، رینجرز اور خفیہ ایجنسیوں کی جانب سے سارے لاپتا سیاسی کارکنوں اور شہریوں کو فوراََ آزاد کیا جاۓ اور زمہ دار ریاستی اداروں، ایجنسیوں کے افراد کو گرفتار کر کے عدالت میں ان کے خلاف مقدمے دائر کیئے جائیں۔

سندھ میں سیاسی قومی کارکنوں کی شہادتوں، گمشدگیوں، ٹارچر، انسانی حقوق کی پامالیوں کے خلاف مسلسل جدوجہد کرنے والی سندھ کی باشعور بیٹیوں بیٹوں، سیاسی کارکنوں، دانشوروں، ہاریوں ، محنت کشوں، نوجوانوں، وکیلوں، صحافیوں کو اپنی جدوجہد میں اپنے سیاسی موقف اور مطالبات کو کلئر اور واضح رکھنا چاہیئے تاکے سندھی قوم کو سندھ کی قومی جدوجہد کے نتیجے میں کیا جانے والا ریاستی تشدد، ںا انصافیاں، ریاستی جبر سمجھ میں آئے اور تاریخی قوموں کی قومی جدوجہد کا مقصد بھی، اور یہ بات بھی سندھی قوم کو سمجھ میں آئے کے ریاستی اداروں کے اس تشدد اور جبر کے پیچھے ان کی سامراجی ذہنیت اور قومی تحریکوں کی جدوجہد کے پیچھے ایک سیاسی تاریخی مقصد ہے۔

ریاست مظلوم قوموں کی قومی آزادی کی تحریکوں کو کچلنے کے لیے ریاستی سفاکی، جارحیت، بربریت کے ہتھکنڈوں کو استعمال کر رہی ہے، جبکہ مظلوم قومیں اپنے اپنے مادرِ وطن کی قومی آزادی کی جہد مسلسل کا فرض نبھا رہے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker