امریکہ سمیت مغربی ممالک کے حمایت کی مشکور ہے، ریاستی سطح پر بھی یہی امید رکھتے ہیں، بی آر پی

جنیوا (ریپبلکن نیوز) بلوچ ریپبلکن پارٹی کی جانب سے ایک مرکزی بیان میں ان تمام ممالک کا شکریہ ادا کیا گیا ہے جنھونے نے جنیوا میں قوام متحدہ کے اجلاس کے دوران بی آر پی کے نمائدے کی حمایت کی۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ جنیوا میں اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے متعلق 34ویں اجلاس کے دوران جب بلوچ ریپبلکن پارٹی کے نمائدے کی طرف نام نہاد چائنہ پاکستان اکنامک کوردی ڈور (سی پیک) اور اس کی بلوچ قوم پر مہلک اثرات کے بارے میں اپنا بیان دینا چاہا تو پاکستان اور چائنہ کی طرف سے انھہیں روکنے کی کوششیں کئ گئی اور اجلاس کے انتظامیہ سے یہ کہہ کر بی آر پی کے نمائدے کو خطاب کرنے سے روکنے کی اپیل کی گئی کہ یہ پاکستان کا اندرونی مسئلہ ہے جبکہ امریکہ، برطانیہ، ہالینڈ، ناروے اور کنیڈا نے پاکستان کے موقف کو مسترد کرتے ہوئے ہمارے نمائدے کی حمایت کی اور انتظامیہ سے اپیل کی کہ بی آر پی کےنمائدے کو اپنا بیان مکمل کرنے کی اجازت دی جائے۔ جس کی بلوچ ریپبلکن پارٹی اور بلوچ قوم مشکور ہیں بیان میں مزید کہا گیا کہ ہمیں یقین ہے کہ امریکہ سمیت تمام مہذب مملک بلوچ قوم کی اپنے جائز حقوق، سرزمین و وسائل اور حق آزادی کیلئے جمہوری اور اقوام متحدہ کے قراردادوں کے عین مطابق جدوجہد کی اصولی حمایت کرینگے، بلوچ قوم کئی دہائیوں سے پُر امین اور جمہوری راستیں آختیار کرتے ہوئے اپنی ہی سرزمینِ پر اپنے حقوق کے طلب گار ہیں مگر پاکستان کی جانب سے بلوچ قوم پر فوج کشی، ہزاروں سیاسی کارکنوں اور طلبا کے اغوا اور ان کی مسخ شدہ لاشیں پھکنے جیسے وحشیانہ اعمال سے جواب دیا گیا، بلوچ قوم کے عظیم رہنما نواب اکبر خان بگٹی نے اپنی تمام تر زندگی میں سیاسی اور جمہوری طریقے سے اپنے لوگوں کے حق کی بات کی لیکن انھہیں پاکستان نے بندوق کے زور پر پہاڑوں میں دکھیل کر شہید کردیا، بلوچ سرزمین پر لوگوں کو جانورں کی طرح قتل کیا جارہا ہے اور وہاں پر میڈیا کو جانے کی اجازت نہیں تمام چیزیں پاکستان آرمی کنٹرول کرتی ہے اور اب اقوام متحدہ جیسے عالمی ادارے میں بھی بلوچ قوم کی آواز کو دبانے کی کوشش کی جارہی ہے اس بات سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ بلوچستان میں رہنے والے لوگوں کے ساتھ کیا ہوتا ہوگا۔ بلوچ ریپبلکن پارٹی امریکہ، برطانیہ، ہالینڈ، ناروے، اور کنیڈا کے نمائدگان کے حمایت پر ان کے مشکور ہیں اور ہمیں امید ہے کہ مزکورہ مملک آئندہ بھی محکوم و مظلوم بلوچ قوم کیلئے آواز بنے گے اور ہماری جمہوری جدوجہد کی ریاستی سطح پر بھی عملی اور اخلاقی حمایت کرینگے۔ 

مزید خبریں اسی بارے میں

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker