بھارت میں لڑکی کو آنکھ مارنے پر لڑکے کو تین ماہ قید کی سزا

نئی دہلی(ریپبلکن نیوز) بھارتی ریاست مدھیا پردیش کی عدالت نے لڑکی کو آنکھ مارنے کے جرم میں بس کلینر کو 3 ماہ کے لیے جیل بھیج دیا جبکہ متاثرہ لڑکی نے عدالتی فیصلے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام لڑکیوں کو خوفزدہ ہونے کے بجائے ایسے لوگوں کے خلاف رپورٹ درج کرانی چاہیے تاکہ ان کے خلاف سخت کارروائی کی جا سکے، بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق چند ماہ قبل ریاست مدھیا پردیش میں 17 سالہ لڑکی کالج جانے کے لیے بس اسٹاپ پر کھڑی تھی کہ اس دوران بس کلینر تکارام نے لڑکی کو آنکھ ماری جس پر لڑکی نے اعتراض کیا تو تکارام نے ہنستے ہوئے اس کا مذاق اڑانا شروع کر دیا تاہم لڑکی نے فوری طور پر پولیس اسٹیشن میں رپورٹ درج کرائی جب کہ پولیس نے کچھ عرصے بعد ہی نوجوان کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کردیا۔عدالت نے بچوں سے زیادتی کے قانون کے تحت تکارام کو لڑکی کو آنکھ مارنے کے جرم میں 3 ماہ جیل کی سزا سنا دی، میڈیا سے بات کرتے ہوئے لڑکی کا کہنا تھا کہ وہ عدالتی فیصلے سے بہت خوش ہے جب کہ تمام لڑکیوں کو خوفزدہ ہونے کے بجائے ایسے لوگوں کے خلاف رپورٹ درج کرانی چاہیے تاکہ ان کے خلاف سخت کارروائی کی جاسکے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close