مولوی نور محمد کے پانچ بچے کینسرکے مرض میں مبتلہ، مدد کی اپیل

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچستان میں کینسر ہسپتال نہ ہونے کی وجہ سے بلوچستان کے پھول جیسے بچے مرجا رہے ہیں، مولوی نور محمد کے پانچ بچے بلڈ کینسر میں مبتلہ ہیں جنہیں حکومت کی جانب سے کسی قسم کا مدد حاصل نہیں ہے۔نور محمد کے چھ بچے تھے جن میں سے ایک علاج نہ ہونے کی وجہ سے دنیا سے رخصت ہوگیا۔

نور محمد کے پانچ بچے بلڈ کینسر سے لڑ رہے ہیں جنہیں فوری طورپر مالی مدد کی ضرورت ہے۔ نور محمد کوئٹہ کے علاقے پشتون آباد کا رہائشی ہے جو مالی اعتبار سے کمزور ہے۔ صاحب حیثیت حضرات سے اپیل ہے کہ جتنی ہوسکے نور محمد کی مدد کی جائے تو وہ اپنے پھول جسیے بچوں کو بچا سکے۔

بلوچستان کی قدرتی گیس، سونا، تانبہ، ساحل کوئلہ، کوپر سمیت دیگر معدنیات سے پاکستانی معیشت کا پیہہ چلتا ہے کہ افسوس کہ بلوچستان کے باشندے کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں اور فرزدانِ بلوچستان کینسر کی گرفت میں ہیں جنہیں حکومت کی جانب سے خدا کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ہے۔

حکومت بلوچستان کو چایئے کہ نور محمد سمیت بلوچستان میں موذی مرض میں مبتلہ لوگوں کی مدد کے لیے کوئی نظام متعارف کرائے اور بلوچستان میں فورپر کینسر ہسپتال کے قیام کو ممکن بنایا جائے۔

نور محمد کا رابطہ نمبر ‭0301 3794515‬

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button