صغیر بلوچ کی جبری گمشدگی کے بعد میرے گھر والے شدید پریشانی میں مبتلہ ہیں۔ حمیدہ بلوچ

صغیر بلوچ کی جبری گمشدگی کے بعد گھر والے شدید پریشانیوں میں مبتلہ ہیں

کوئٹہ/رپورٹ(ریپبلکن نیوز) لاپتہ بلوچ طالب علم صغیر بلوچ کی بہن نے کہا ہے کہ ان کا بھائی گزشتہ کئی مہینوں سے پاکستانی خفیہ اداروں کے غیر قانونی قید میں ہے، جبکہ انکا کسی بھی جماعت سے کوئی تعلق نہیں تھا۔

صغیر بلوچ کراچی یونیورسٹی سے اغواحمیدہ بلوچ نے کہنا ہے کہ ان کے بھائی کو بیس نومبر 2017 کو کراچی یونیورسٹی سے خفیہ اداروں کے اہلکاروں نے اغوا کیا تھا، اس وقت وہ خود ہاسٹل میں موجود تھی۔ جبکہ تب سے لیکرآج تک ہر روز ہم پر قیامت کی طرح گزر رہی ہے۔

حمیدہ بلوچ نے کہا ہے کہ صغیر بلوچ کی جبری گمشدگی کے بعد ان کی بازیابی کے لیے انہوں نے اپنی تعلیم چھوڑ دی ، اور اپنی بھائی کی بازیابی کے لیے ہر ممکن کوششیں کیں۔ احتجاجی مظاہرے، پریس کانفرنس اور عدالت میں پٹیشن دائر کرنے کے ساتھ ساتھ مختلف طور و طریقے اپنائے لیکن کچھ حاصل نہیں ہوا۔

صغیر بلوچ کی بہن کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنے بھائی کی بازیابی کے لیے تمام تر کوششیں کیں لیکن انہیں اب تک کچھ فائدہ حاصل نہیں ہوا۔ حمیدہ بلوچ نے درخواست کی ہے کہ ان کے بھائی کی بازیابی کے لیے تمام انسان دوست اپنا آواز بلند کرتے ہوئے اپنا فرض ادا کریں۔

مزید رپورٹس:

نیشنل پارٹی کی بلوچ کش پالیسیاں ناکافی، ریاستی اداروں کا نئی پارٹی بنانے کا فیصلہ

لیاری آپریشن، گینگ وار اور بلوچ نسل کشی

بلوچ لیڈرشپ سے رابطوں کا بیجنگ حکومت کے دعوے میں کتنی سچائی ہے! 

انہوں نے کہا کہ میرے سرزمین سے صرف صغیر بلوچ ہی لاپتہ نہیں ہے بلکہ ہزاروں بلوچوں کو اغوا کیا گیا ہے اور بہت کو شہید کر کے لاشیں بھی پھینکی گئ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر ان کے بھائی نے کوئی جرم کیا ہے تو انہیں عدالت میں پیش کیا جائے۔

حمیدہ بلوچ نے مزید کہا ہے کہ صغیربلوچ کی جبری گمشدگی کے بعد ان کے گھر والے شدید پریشانیوں میں مبتلہ ہیں اور اندر سے ٹوٹ چکے ہیں۔کیونکہ صغیر بلوچ کے رہائی کے لیے وہ کچھ نہی کر پارہے۔ حمیدہ بلوچ نے کہا ہے کہ انہیں گمان بھی نہیں تھا کہ کراچی میں ان کے بھائی کو اغوا کیا جائے گا۔کیونکہ وہ کسی بھی غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث نہیں تھا ۔

خیال رہے کہ صغیر بلوچ کراچی یونیورسٹی میں شعبہ پولیٹیکل سائنس میں سیکنڈ ایئر کا طالب علم ہے جسے پاکستانی خفیہ اداروں کے اہلکاروں نے یونیورسٹی سے حراست میں لینے کے بعد نامعلوم مقام پر منتقل کر کے لاپتہ کردیا ہے۔

 

 

 

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close