شیرجان اور استاد گاجیان پر شہید ولی جان کے قتل کا جرم ثابت نہیں ہوا، خون بہا بی ایل ایف ادا کریگی، یو بی اے

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز)  یو بی اے کے ترجمان مرید بلوچ نے میڈیا کو جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ یو بی اے ایک قومی زمہ دار تنظیم کی حثیت سے شیرجان اور استاد گاجیان کے مسلے پر کمیٹی کے مکمل فیصلے پر متفق ہے

یونائیٹڈ بلوچ آرمی کے ترجمان مرید بلوچ نے اپنے ایک جاری کردہ بیان میں کہا کہ یو بی اے سنگت شیرجان اور سنگت استاد گاجیان کے مسلے پر 6 آزادی پسند تنظیموں جس میں ، بی ایل اے جیئند، بی آر اے، بی آر جی ، بی ایل ایف، لشکر بلوچستان  اور سندھودیش روولیوشنری آرمی پر مشتمل دوستوں کی 9 رکنی کمیٹی October 2018 کو بنائی گئی جس نے BLFاور UBA سے اختیارات لے کر تحقیقات کے بعد اپنا فیصلہ سنایا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ کمیٹی کا فیصلہ 20/ February 2019 کو کیا گیا

ان کا مزید کہنا تھا کہ بی ایل ایف اور یو بی اے کے درمیان گاجیان خان اور شیرجان کے مسئلے پر شروع ہونے والے تنازعے پر شہید جنرل استاد اسلم بلوچ کی جانب سے بنائے گئے مصالحتی کمیٹی کا حتمی فیصلہ ہے

مرید بلوچ نے کہا ہے کہ کمیٹی کی ارکان کئی مہینوں کی تحقیقات معلومات اور گواہوں کے بیانات کے بعد اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ بی ایل ایف شیرجان اور استاد گاجیان پر شہید ولی جان عرف فراز جان والد کمالان بلوچ کو شہید کرنے کا جرم ثابت نہیں کرسکی ہے اور سنگت شہید فراز بلوچ جو اس مسئلے میں شہید ہوا  کمیٹی کی جانب سے اس کی زمہ داری بی ایل ایف کے ساتھیوں پر عائد ہوگی جبکہ کمیٹی کے فیصلے کے مطابق شہید فراز جان کا خون بہا بی ایل ایف کو ادا کرنا ہوگا اور شیرجان کا نیم خون بہا بھی بی ایل ایف کو ادا کرنا ہوگا

انھونے مزید کہا ہے کہ یو بی اے ایک قومی زمہ دار تنظیم کی حثیت سے کمیٹی کے مکمل فیصلے پر متفق ہے

ترجمان کے مطابق یو بی اے اپنا قومی فرض پورا کرتے ہوئے قومی مفادات کو عزیز رکھتے ہوئے اور کمیٹی کے فیصلے کے مطابق سنگت شیرجان اور سنگت استاد گاجیان کو مبارک باد دینے والے بیان کو واپس اور اگر بی ایل ایف کی دل آزاری ہوئی ہے تو معذرت خواہ ہے جبکہ سنگت شیرجان اور سنگت استاد گاجیان اپنے مستقبل کے فیصلہ کے لئے آزاد ہیں وہ یو بی اے سمیت کسی بھی آزادی پسند تنظیم میں شمولیت اختیار کرنے میں آزاد ہیں

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button