ڈی ایس پی جہانزیب کاکڑ کو قتل کرنے والوں کو عبرت کا نشان بنایا جائے۔ جنرل سیکرٹری جماعت اسلامی بلوچستان

کوئٹہ (ری پبلکن نیوز )جنرل سیکرٹری جماعت اسلامی بلوچستان ہدایت الرحمان بلوچ نے کہا کہ ڈی ایس پی جہانزیب کاکڑ کو دفتر میں قتل کرنے اور پھر اس کو خودکشی کا رنگ دینے والوں کو بے نقاب کرکے عبرت کانشان بنا دیا جائیں حکمران اس کیس کو بھی ثاقبہ کاکڑ کیس کی طرح سردخانے کی نظر کرنا چاہتے ہیں ظالموں کے خلاف سب کو متحد ہونے کی ضرورت ہے ظلم کے خلاف اگر بروقت بند نہ باندھا گیا تو یہ بڑھتا جائیگااور پھر یہ ہمارے گھروں وخاندان تک پہنچے گا حکومت وقت کو ظالموں کی مدد کرنے کے بجائے مظلوموں کا ساتھ دینا چاہیے جماعت اسلامی ایماندار صالح آفیسرزونیک صالح مظلوموں کیساتھ ہے ۔ظالم وزیادتی ودرندگی وچوری ڈاکے پرحکومتی غفلت وکوتاہی کی وجہ سے آج حکمرانوں کے بچے بھی اغواء وغائب ہورہے ہیں حکومت خواب غفلت سے بیدار ہوجائیں اور اغواء ہونے والوں کو بازیاب کریں ۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن بدامنی اور ظلم نے ہمارے معاشرے کو تباہ کرکے رکھ دیا ہے اس ظلم کے خلاف خاموشی اختیار کرنے والے بھی ظالموں کے ظلم میں برابر کے شریک ہیں مظلوموں کی آہ وبکا ہمارے سارے نظام کو ڈبو دیگی حکومت جہانزیب کاکڑ اور ثاقبہ کاکڑ کے لواحقین وخاندانوں کو فوری انصاف دیکرملوث مجرموں کو بے نقاب کرکے عبرت کانشان بنادیں ظلم ودرندگی اورزیادتی پر خاموش رہنے والوں کو سوچھنا چاہیے کہ خاموشی کی غفلت کی وجہ سے یہ ظلم وزیادتی ان کے گریبانوں وگھروں تک بھی پہنچ سکتی ہے جماعت اسلامی ہر ظلم کے خلا ف اور مظلوموں کیساتھ ہیں بلوچستان میں اغوا برائے تاوان اور لوٹ مار کا سلسلے پھر شروع ہونا لمحہ فکریہ ہے حکومتی غفلت وخاموشی کا چور لٹیرے اور ظالم فائدہ اُٹھا رہے ہیں مظلوموں کا اگر ساتھ نہ دیا گیا تو اللہ کی قہر وغضب سے کوئی نہیں بچ سکتا ۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close