نائب صدر کی گرفتاری کے فیصلے نے بغداد سے مزید دور کردیا: بارزانی

نیوزڈیسک(ریپبلکن نیوز) عراق کے صوبہ کردستان کے وزیراعلیٰ مسعود بارزانی نے بغداد حکومت کی جانب سے نائب وزیراعلیٰ کوسرت رسول کی گرفتاری کے فیصلے کی مذمت کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ کوسرت رسول کی گرفتاری کے فیصلے نے بغداد کے ساتھ امن بقائے باہمی کے تحت آگے بڑھنا اور بھی مشکل بنا دیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مسعود بارزانی نے ایک بیان میں کہا کہ ان کے نائب کی گرفتاری کا فیصلہ محض سیاسی ہے، تاہم ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ بغداد انہیں کسی صورت میں گرفتار نہیں کرسکتا۔

خیال رہے کہ عراق کی ایک عدالت نے کردستان کے نائب وزیراعلیٰ کوسرت رسول کی گرفتاری کا حکم دیا تھا۔ ان پر عراق کے خلاف اشتعال انگیز بیان دینے اور عراقی فوج کی توہین کا الزام عاید کیا گیا ہے۔

عراق کی سپریم جوڈیشل کونسل کے ترجمان عبدالستار بیرقدار نے گذشتہ روز ایک بیان میں بتایا کہ عدالت نے کوسرت رسول کی فوری گرفتاری کے احکامات جاری کیے ہیں۔ ان پر عراقی فوج اور فیڈرل پولیس کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کیے ہیں۔

بیرقدار کا کہنا تھا کہ عدالت کوسرت رسول کے بیان کو فوج کی توہین اور مسلح افوج کے خلاف تشدد پر اکسانے پر محمول قرار دیتی ہے۔ اس لیے انہیں آئین کی دفعہ 226 کے تحت گرفتاری کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close