چین پاکستان استحصالی منصوبوں میں چینی کرنسی یوآن استعمال ہوگا

بلوچستان بھر میں پاکستان اور چین کے استحصالی منصوبے بلوچ سرمچاروں کے تابڑتوڑ حملوں کے زد میں ہیں

کوئٹہ(ریپبلکن نیوز) پاکستانی حکمرانوں نے اس بات کا  اعتراف کرلیا ہے کہ چین پاکستان استحصالی منصوبوں میں ڈالر اور پاکستانی کرنسی کے بجائے چینی کرنسی کو استعمال کیا جائے گا۔

پاکستانی حکمرانوں کا کہنا ہے کہ چینی کرنسے کے استعمال سے تجارت میں آسانی ہوگی جبکہ حقیقت یہ ہے کہ چین گزشتہ کئی عرصے سے پاکستان پر یہ دباؤ دیتی رہی ہے کہ بلین ڈالرز کی سرمایہ کاری میں وہ ڈالر یا دیگر کرنسی کی استعمال کے بالکل خلاف ہے اور ان تمام منصوبوں میں چینی کرنسی یوآن کو استعمال میں لایاجایے گا۔

 

یہ بھی پڑھیں: بی آر اے کے سرمچاروں نے پاکستانی فوج کے مرکزی چوکی پر حملے کی زمہ داری قبول کرلی

 

خیال رہے کہ چین اور پاکستان کے استحصالی منصوبوں کو  بلوچ قوم نے مکمل طورپر رد کردیا ہے اور بلوچستان بھر میں چائنہ پاکستان اکنامک کوریڈور میں شامل منصوبوں پر بلوچ آزادی پسند مسلح تنظیمیں تابڑتوڑ حملے کرتے رہے ہیں۔ جبکہ ان منصوبوں پر کام کرنے والے پاکستانی پیرا ملٹری فورسز (ایف سی) کے اب تک متعدد اہلکار ہلاک ہوچکے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close