بی آر پی جرمنی کی جانب سے اسرائیل جرمنی کانگریس میں شرکت

 BRP-Ger فریکفرٹ(ریپبلکن نیوز)بلوچ ری پبلکن پارٹی جرمنی چیپٹر کے صدر جواد محمد بلوچ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ بی آر پی جرمنی کی جانب سے جرمنی کے شہر فریکفرٹ میں اسرائیل جرمنی کانگریس میں شرکت کی گئی اور بلوچستان میں جاری ریاستی ظلم و جبر اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو اجاگر کیا گیا۔ تقریب میں بی آرپی کے جرمنی چیپٹر کے صدر جواد محمد بلوچ، جنرل سیکٹری عادل بلوچ سمیت کارکنان نے حصہ لیا اور جرمنی اور اسرائیل کے اہم رہنماوں اور میڈیا کے نمائندوں سے بلوچستان کے حالات کے بارے میں آگاہی فراہم کی جن میں اسرائیل کے سابقہ ڈپٹی وزیراعظم، نائب وزیراعظم اور وزیر دفع کے عہدوں پر رہنے والے رہنما شوال موفاز، اسرائل جرمنی کانگریس کے صدر ساچا سٹاسکی، فرینکفرٹ شہر کے خزانچی اوئی بیکر سمیت اہم سیاسی رہنماوں، حکومتی عہدیداروں اور میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کی۔ اس پروگرام میں اسرائیل کے موجودہ صدر اور وزیراعظم نتن یاہو نے بھی ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کیا۔ بی آر پی جرمنی کے صدر جواد محمد بلوچ نے تقریب سے خطاب کیا اور بلوچستان کے تاریخ، بلوچ قومی جدوجہد اور ریاستی مظالم کے بارے میں تفصیلی معلومات فراہم کی۔ انھوں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی ریاستی روز اول سے بلوچ نسل کشی کا ارتکاب کررہی ہے اور بلوچستان میں جنگی جرائم اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں میں ملوث ہے۔ ملاقات میں رہنماوں اور شرکاء نے بی آر پی کارکنان سے اظہار یکجہتی کیا اور بلوچ قومی جدوجہد کی بھرپور حمایت کی یقین دہانی بھی کرائی۔ بی آر پی یورپی ممالک سمیت دنیا بھر میں بلوچ قومی تحریک، بلوچستان میں جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں اور ریاست کی جانب سے جنگی جرائم کو اجاگر کرتی رہیگی جس سے بلوچ قومی جدوجہد کے حوالے سے بین الاقوامی حمایت میں اضافہ یقینی ہے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close