فورسز نے فوجی کاروائی کے دوران ڈیرہ بگٹی میں پانچ لوگوں کو شہید کردیا۔شیر محمد بگٹی

کوہٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچ ریپبلکن پارٹی کے مرکزی ترجمان شیر محمد بگٹی نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ پاکستانی فوج نے گن شب ہیلی کاپٹروں اور زمینی فوج کے ہمرہ ڈیرہ بگٹی کے علاقوں ڈوئی ودھ، پتھر نالہ، پاتر سمیت مختلف علاقوں میں آپریشن کرتے ہوئے پانچ افراد کو شہید جبکہ متعدد کو اغوا کردیا، ترجمان کا کہنا تھا کہ فورسز نے ڈوئی وڈھ کے آس پاس کے علاقوں میں عام آبادیوں پر فضائی بمباری کر کے ایک ہی گھر کے تین افراد کو شہید کردیا جن میں کلیری بگٹی، گل بخت زوجہ کلیری بگٹی اور جامو بگٹی شامل ہے جبکہ اسی علاقے میں ایک اور کاروائی میں فورسز نے دو افراد کو شہید کردیا ہے جبکہ فورسز نے آپریشن کے دوران مقامی مالدار طبقے کے 300 سو سے زائد بھیڑ بکریوں کو بھی لوٹ کر اپنے ساتھ لے گئے ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان میں ایک لمہ بھی ایسا نہیں گزتا جس میں کوئی گھر یا خاندان ریاستی بربریت کا شکار نہ ہوا ہو۔ سوئی میں مقامی افراد کے گھروں کو تباہ کر کے ان کو اپنے ہی علاقے میں بے گھر کیا جارہا ہے انھونے انسانی حقوق کے تنظیموں خاص طور پر اقوام متحدہ سے اپیل کی کہ وہ بلوچستان میں جاری پاکستانی فورسز کے جنگی جرائم کو رکوانے کیلئے اقدامات کریں۔ ترجمان نے پارٹی کارکنان کو ہدایت کی کہ شہید نوابزادہ بالاچ مری، شہید جلیل ریکی اور شہید یونس بلوچ کی برسی کے مناسبت سے 21 نومبر کو ریفرنسز کا انعقاد کر کے شہید کو خراج تحسین پیش کریں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close