بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن آزاد حب زون کا آرگنائزنگ باڈی اجلاس

کوئٹہ(ریپبلکن نیوز)بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن آزاد حب زون کا آرگنائزنگ باڈی اجلاس زیر صدارت زونل ڈپٹی آرگنائزر منعقد ہوا ۔اجلاس کے مہمان خاص مرکزی کمیٹی کے رکن میران بلوچ تھے۔اجلاس میں مرکزی سرکیولر،سابقہ کارکردگی رپورٹ،تنظیمی امور،تنقیدی نشست،علاقائی و عالمی سیاسی صورتحال اور آئندہ لائحہ عمل کے ایجنڈے زیر بحث رہے ۔اجلاس کا باقائدہ آغاز عظیم بلوچ شہداء کی یاد میں خاموشی سے ہوئی ۔اجلاس سے بی ایس او آزاد کے رہنماؤں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلوچ نوجوانوں کی جدوجہد بلوچ قومی تحریک کو ناقابلِ شکست بنا چکی ہے۔قابض فورسز کی بربریت کے باوجود تحریک میں تسلسل بلوچ عوام و جہدکاروں کی آپس میں اعتماد کی بدولت ہی ممکن ہوا ہے۔ قابض ریاست تحریک کو کاؤنٹر کرنے کے لئے بلوچ عوام و آزادی کی جہد کاروں کے درمیان فاصلہ قائم کرنا چاہتی ہے تاکہ بلوچ عوام کو گمراہ کرکے تحریک سے دور کیا جا سکے۔ اپنے ان ہتھکنڈوں کو عملی جامہ پہنانے کے لئے قابض نے نام نہاد قوم پرست و مڈل کلاس گروہ پارٹی نیشنل پارٹی، بی این پی مینگل و دیگر لوگوں کو یہ زمہ داری سونپی ہے تاکہ یہ لوگ بلوچ عوام کے ذہنوں کو منفی ہتھکنڈوں کے ذریعے سے تحریک سے دور کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ قابض کے تمام اداروں کا بلوچ تحریک کے خلاف حواس باختگی کی حد تک سرگرم ہونا اور بلوچ نسل کشی کی کاروائیوں میں شدت لانا قابض کی شکست خوردگی و نفسیاتی شکست کی علامت ہے۔ بلوچستان پر اپنی قبضہ گیریت کی کمزور ہوتی گرفت کو مضبوط کرنے کے لئے ریاست ہرممکن کوششوں میں مصروف ہے، لیکن بلوچ جہدکاروں و عوام کی قربانیاں ریاستی کوششوں و سازشوں کی ناکامی کا سبب بن رہے ہیں۔ رہنماؤں نے کہاکہ غیر مہذب و اخلاقیات سے عاری دشمن ہمیشہ سے دھوکہ و فریب اور طاقت کا سہارا لیکر بلوچ سرزمین پر قبضہ برقرار رکھنے کی کوشش کرچکی ہے۔ اسلام و مذہب کے دعویدار قابض نے بلوچ جہد کاروں کو قرآن کے نام پر دھوکہ دینے سے بھی گریز نہیں کیا جو کہ قابض کی نفسیات کی عکاس ہے۔انہوں نے کہاکہ نیشنل پارٹی، ریاستی گماشتہ سرداروں ، بی این پی مینگل و دیگر ریاستی وفادار پارٹیاں چند مراعات کی خاطر اپنی ہزاروں سالہ تاریخ، اہمیت کے حامل جغرافیہ اور بلوچ مستقبل کا سودا لگا چکے ہیں۔بی ایس او آزاد کے رہنماؤں نے کہا کہ بلوچ عوام خصوصاََ بلوچ سیاسی کارکنان ریاستی عزائم کا ادراک رکھتے ہوئے انہیں ناکام بنانے کیلئے اپنی توانائیاں صرف کریں تاکہ قومی شناخت کو لاحق سنجیدہ خطرات سے بچایا جاسکے۔اجلاس میں تمام ایجنڈوں پر بحث مباحثہ کے بعد زونل سابقہ آرگنائزنگ کمیٹی تحلیل کرکے تنظیمی پروگرام کو آگے لے جانے کیلئے نئی زونل آرگنائزنگ باڈی تشکیل دی گئی۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close