بلوچستان میں 7900 اسکول چار دیواری سے محروم اور 5296 اسکول صرف ایک کلاس روم پر مشتمل ہیں

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچستان کے محکمہ تعلیم کی جانب سے جاری کردہ تفصیلات کے مطابق بلوچستان بھر میں 9247 اسکولوں میں پانی پینے کی سہولیات موجود نہیں ہیں جبکہ ایسے اسکولوں کی تعداد 9838 ہے جہاں ٹوائلٹ نہیں ہے۔

تفصیلات میں مزید بتایا گیا ہے کہ بلوچستان میں 7900 ایسے اسکول ہیں جن میں چار دیواری نہیں، جبکہ 5296 اسکول ایسے ہیں جہاں صرف ایک ٹیچر اور ایک ہی کلاس روم ہے۔

بلوچستان میں جو بھی حکومت آتی ہے تعلیمی ایمرجنسی کے جھوٹے نعرے لگاتی ہے، اس سے پہلے کی حکومتوں نے بھی بلوچستان میں تعلیمی نظام کو بہتر کرنے کے جھوٹےوعدے کیے لیکن حالات یہ ہیں کہ بلوچستان میں تعلیمی نظام مزید خراب دکھائی دیتی ہے۔

بظاہر تو وزیرِ اعلٰی بلوچستان جام کمال نے بلوچستان میں سہولیات سے محروم اسکولوں کے مسئلے پر نوٹس لے لیا ہے لیکن ہمیشہ کی طرح یہ نوٹس صرف اخباری بیانات کی حد تک ہی رہے گا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button