بیلسٹک میزائلوں کی تیاری ہر گز نہیں روکیں گے : پاسداران انقلاب

نیوزڈیسک(ریپبلکن نیوز) ایرانی پاسداران انقلاب کی فضائیہ کے سربراہ جنرل امیر علی حاجی زادہ کا کہنا ہے کہ ان کا ملک متنازع بیلسٹک میزائلوں کی تیاری ہرگز نہیں روکے گا جس کو امریکا عالمی امن اور سلامتی کے لیے خطرہ شمار کرتا ہے۔

ایرانی خبر رساں ایجنسی مہر کے مطابق پاسداران کے کمانڈر کا کہنا ہے کہ ان میزائلوں کی تیاری ایرانی سرزمین پر عمل میں لائی جا رہی ہے اور کوئی طاقت اسے روک نہیں سکتی۔

اگرچہ ایران کی میزائل سرگرمیوں کو حالیہ عرصے میں امریکا اور یورپی یونین کی جانب سے شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا تاہم تہران اس امر کو باور کراتا ہے کہ اس نے بیلسٹک میزائلوں کی تیاری کے حوالے سے عالمی برادری کو چیلنج کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

ایرانی قومی سلامتی کونسل کے سکریٹری علی شمخانی یہ بات زور دے کر کہہ چکے ہیں کہ میزائل پروگرام کے حوالے سے ان کے ملک کی سرگرمیاں جاری رہیں گی۔

عالمی سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 ایران سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ نیوکلیئر ہیڈ لے جانے کی صلاحیت رکھنے والے بیلسٹک میزائلوں کی تیاری روک دے۔

امریکا اس بات کو باور کراتا ہے کہ ایران بیلسٹک میزائلوں کے تجربات کے ذریعے بین الاقوامی قراردادوں کی خلاف ورزی کا مرتکب ہو چکا ہے جب کہ تہران کا یہ کہنا ہے کہ اس کے میزائل نیوکلیئر وار ہیڈ لے جانے کی صلاحیت نہیں رکھتے۔

گزشتہ برس کے اوائل سے واشنگٹن نے ایرانی میزائل پروگرام کی سپورٹ میں ملوث افراد ، اداروں اور کمپنیوں پر متعدد پابندیاں عائد کیں۔ ان میں اکثریت ایرانی پاسداران انقلاب کے زیر انتظام اداروں کی ہے۔

امریکی ایوان نمائندگان میں خارجہ امور کی کمیٹی کے سربراہ اِڈ روئس نے اتوار کے روز فوکس نیوز نیٹ ورک کے ساتھ گفتگو میں اس امر کی تصدیق کی کہ تہران بین البراعظمی بیلسٹک میزائلوں کی تیاری کے لیے کوشاں ہے۔ انہوں نے کہا کہ "اس پیش رفت کا مطلب یہ ہے کہ ایران ہماری سرزمین کو بھی نشانہ بنا سکتا ہے”۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close