افغانی اور پاکستانی وزرائے خارجہ کے درمیان لفظی جنگ

کوئٹہ(ریپبلکن نیوز)  سہ ملکی مذاکرات کے دوران پاکستانی وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی اور افغان وزیرِ خارجہ صلاالدین ربانی کے درمیان لفظی جنگ، دونوں کا ایک دوسرے پر الزام تراشی۔ افغان وزیر کا پاکستان سے مخلصانہ اور نتیجہ خیز اقدامات اٹھانے کا مطالبہ۔

پاکستانی وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی سہ ملکی مذاکرات کے لیے ہفتے کو ایک روزہ دورے پر افغانستان میں پہنچے تھے۔ اس مذاکراتی عمل میں چینی وزیرِ خارجہ بھی شامل تھا۔

افغان وزیرِ خارجہ نے اپنے پاکستانی ہم منصب سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ وہ پاکستان سے امن کے لیے نتیجہ خیز اقدامات اور مصلحتی عمل کے لیے مخلص اقدامات کی حمایت کریگا۔

جبکہ پاکستانی وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے علاقائی کشیدگی کا زمہ دار افغانستان کو ٹہراتے ہوئے خود کو بری الزمہ قرار دیا۔جبکہ حقیقت یہی ہے کہ افغانستان میں پاکستانی پراکسی وار لڑی جارہی ہے جس کا مقصد افغانستان کو غیر مستحکم کرنا اور اپنا اثر رسوخ قائم کرنا ہے۔ خیال رہے کہ افغانستان میں چین کی دلچسپی بڑھتی جارہی ہے۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں