سوئی: پی پی ایل کے خلاف ریٹائرڈ ملازمین کا احتجاج و ریلی

ڈیرہ بگٹی (رہپبلکن نیوز) سوئی میں پی پی ایل کمپنی کے ریٹائرڈ اور فوت شدہ  سن کوٹہ ڈبلنگ ہونے والے ملازمین کے بچوں شہریوں کی احتجاجی ریلی
ریلی میں مختلف سکولوں کے بچوں کے علاوہ معززین علاقہ اور عوام کی بڑی تعداد نے شرکت کی
احتجاجی ریلی تحصیل بازار سے پی پی ایل فینسنگ ایریا گیٹ نمبر1تک نکالی گئی ریلی کے شرکاء نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر ان کے مطالبات کے حق میں نعرے درج تھے جس کے بعد گیٹ نمبر ایک کے سامنے مظاہرہ کیا گیا  مظاہرین نےگیٹ نمبر1کے سامنے ٹائر جلاکر سڑک بند کردیا اس موقع پر احتجاجی مظاہرین نے اپنے مطالبات کے حق میں اور پی پی ایل کمپنی کے خلاف شدید نعرے بازی کی. اس موقع پر احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے رہنماوں نے کہا پی پی ایل کمپنی مقامی قبائل سے کئے گئے تحریری معاہدوں سے روگردانی کررہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پی پی ایل کمپنی کے ہٹ دھرم کی وجہ سے آج ہمارے بچے احتجاج پر مجبور ہیں۔ مظاہرین کے نمائدوں کا کہنا تھا کہ وفاقی اور صوبائی حکومت پی پی ایل کمپنی کو لگام دے اور مقامی آبادی کو بنیادی سہولیات کی فراہمی یقینی بنانے. اس موقع پر پی پی ایل کمپنی کے ریٹائرڈ اور فوت شدگان ملازمین کے بچوں سے اظہار یکجہتی کے لئے سوئی شہر میں مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال رہا اورتمام کاروباری اور تجارتی مراکز بند رہے یاد رہے سوئی گیس میں مقامی افراد کو نوکریوں میں ہمیشہ نظر انداز کیا جاتا رہا ہے جبکہ معمولی سے چپڑاسی اور مالی کی نوکریا بھی بڑی مشکل سے شہید نواب اکبر خان بگٹی کے دور میں ان کی دباو کی وجہ سے کچھ لوگوں کو ملی تھی تب یہ معاہدہ کیا گیا تھا کہ جب ملازمین میں کوئی فوت یا ریٹائرڈ ہوجانے کی صورت میں ان کے بچوں کو نوکری فراہم کردی جائے گی۔ مگر نواب بگٹی کی شہادت کے بعد سے پی پی ایل انتظامیہ نے مقامی لوگوں کے ساتھ ناروا سلوک شروع کررکھا ہے جو ختم ہونے کا نام ہی نہیں لے رہاہے

مزید خبریں اسی بارے میں

Close