احتساب عدالت کو کہیں اور سے کنٹرول کیا جارہا ہے۔ نواز شریف

اسلام آباد(ریپبلکن نیوز) سابق وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ نیب اور احتساب عدالت کو کہیں اور سے کنٹرول کیا جا رہا ہے اور انہیں واضح پیغام دیا گیا ہے کہ نواز شریف کو ہر قیمت پر سزا دینی ہے مجھے سزا دی نہیں بلکہ دلوائی جا رہی ہے اور مجھے جان بوجھ کر پھنسایا جا رہا ہے میرے اور عمران خان کے مقدمات میں ضابطے اور اصول الگ الگ استعمال کئے جا رہے ہیں احتساب عدالت میں سماعت کے لیے پیشی کے موقع پر صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ عدالتوں کا دہرا معیار ہے جو جلد اپنے منطقی انجام کو پہنچے گا تاہم اس دہرے معیار کے خاتمے کے لیے جد و جہد جاری رکھیں گے انہوں نے کہا کہ احتساب کو کہیں اور سے کنٹرول کیا جا رہا ہے اور جو قصور ہم نے نہیں کیا اس کا بھی ہم سے انتقام لیا جا رہا ہے کیونکہ مجھے سزا دینے کا پہلے سے ہی فیصلہ طے کر لیا گیا تھا پانامہ کیس میں فیصلہ نہیں بلکہ احتساب عدالت کو واضح پیغام دیا گیا تھا کہ نواز شریف کو ہر قیمت پر سزا دینی ہے مجھے سزا دی نہیں بلکہ دلوائی جا رہی ہے کیونکہ عدالتی فیصلے میں جو الفاظ استعمال ہوئے وہی الفاظ ہمارے سیاسی مخالفین استعمال کر رہے ہیں، نواز شریف نے کہا کہ میں نے 1999 میں طیارہ ہائی جیکنگ کیس میں بھی جو باتیں کہیں تھیں وہی تمام باتیں بعد میں سچ ثابت ہوئی تھیں مجھے اب پھر سے جان بوجھ کر پھنسایا جا رہا ہے اور آج بھی وہی معاملہ دہرایا جا رہا ہے نواز شریف نے عمران خان کو عدالت سے ضمانت کے سوال کے جواب میں کہا کہ میرے مقدمے میں کچھ اور جب کہ دوسروں کے مقدموں میں اصول اور ضابطے الگ الگ ہیں تاہم یہ احتساب نہیں انتقام ہے اور اس کے باوجود بھی ہم عدالتوں کا احترام کرتے ہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close