من پسند وزارتیں نہ ملنے پر، باپ کا مرکز میں تحریک انصاف کی حمایت سے دستبر دار ہونے کا فیصلہ

کوئٹہ( ریپبلکن نیوز)بلوچستان عوامی پارٹی نے مرکزی حکومت میں تحریک انصاف سے رائیں جدا کرلیں ۔ زبیدہ جلال نے جام کمال کو اپنے تحفظات سے آگاہ کردیا۔

صوبے میں حکومت بنانے کیلئے جمعیت اور بی این پی متحرک قائد ایوان کیلئے تحریک انصاف کے صوبائی صدر کے نام پر حامی بھر لی۔اسپیکر کا عہدہ بھی تحریک انصاف کے حصے میں آئیگا۔

حکومت سازی میں اے این پی ، ایچ ڈی پی ، بی این پی عوامی، جے ڈبلیو پی کو بھی شمولیت کی دعوت دی جائیگی ۔گزشتہ روز اسلام آباد میں بلوچستان عوامی پارٹی کے اراکین قومی اسمبلی کا اجلاس رکن قومی اسمبلی زبیدہ جلال کی زیر صدارت منعقدہ ہوا جس میں اراکین قومی اسمبلی نے وفاق میں تحریک انصاف کی جانب سے وزارتیں نہ دینے پر اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے انتخابات میں تحریک انصاف کو ووٹ نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔مرکزی میں بلوچستان عوامی پارٹی کی متوقع پارلیمانی لیڈر زبیدہ جلال نے تحفظات سے پارٹی کے سربراہ جام کمال کو آگاہ کردیا ہے ۔ صوبے میں بھی تحریک انصاف اور بلوچستان عوامی پارٹی کے درمیان حکومت سازی سے متعلق ڈیلاک برقرار ہے ۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close