18 جولائی کو پنجگور سےملنے والی چار لاشوں سے ایک کی شناخت ہوگی

پنجگور( ریپبلکن نیوز) 16 جون 2014 کو  ضلع  پنجگور کے علاقے پروم میں دز کے مقام سے ریاستی فورسز کے ہاتھوں اغواہ ہونے والے خیر بحش بلوچ کے والد کا اپنے بیٹے کے آنے کا انتظار ہمیشہ کے لیے دم توڈ گیا۔

آج کمانڈ ایف سی پنجگور نے انھیں ایف سی کیمپ بلا کر یہ اطلاع دی کہ خیر بحش کو ہم نے سات ماہ قبل قتل کر اسکی لاش دیگر چار اسیران کے ساتھ درگ دپ پروم میں اجتماعی قبر میں دفن کیا تھا۔

خیر بحش اور دیگر اسیران کی لاشیں 18 جولائی کو پروم درگ دپ کے مقام سے ملی تھیں جن کو اس وقت شناخت نہ ہونے کے سبب مقامی انتظامیہ نے دفن کردیا تھا۔

خیر بحش کے والدہ گزشتہ کئی دنوں سے دیگر اسیران کے فیملی کے ہمراہ پنجگور میں احتجاج کررہے تھے 18 جولائی کو ملنے والوں لاشوں میں سے دیگر کی شناخت تاحال نہ ہوسکی ہے لیکن خدشہ ظاہر کیاجارہا ہیکہ وہ پنجگور کے محتلف علاقوں سے اغواہ ہونے والے اسیران کے ہونگے۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close