بلوچ لبریشن ٹائیگر نے منشیات فروش کے قتل کی ذمہ داری قبول کرلی

Firingکوئٹہ (ریپبلکن نیوز)  بلوچ لبریشن ٹائیگر کے ترجمان میران بلوچ نے نامعلوم مقام سے سیٹلائٹ فون کے زریعے میڈیا کو جاری کرتے ہوئے اپنے ایک بیان میں کہا کہ 12 جون کو ہمارے سرمچاروں نے دشت اور مند کے درمیان کترینز کے علاقے میں منشیات فروش ستار ولد دادرحمان جو دشت کلسر کا رہائشی تھا گرفتار کیا اور بعد میں بلوچی عدالت نے انہیں موت کا سزا سنایا انہیں ہمارے سرمچاروں نے کترینز میں ہلاک کیا.مزکورہ شخص مند سے منشیات لاکر پورے دشت میں سپلائی کرتا تھا کئی دفعہ تنبیہ کرنے کی باوجود وہ اپنے کرتوتوں سے باز نہیں آیا بالآخر انہیں موت کا سزا سنا دیا گیا ہم منشیات کے کاروبار اور پھیلاؤ کو بلوچ نسل کشی سمجھ کر انکی خلاف سخت سے سخت ایکشن لیں گے ہم اک بار پھر منشیات فروشوں کو سختی سے تنبیہ کرتے ہوئے آخری وارننگ دیتے ہیں کہ وہ نسل کشی جیسے گھناؤنے دندے سے باز آئیں ورنہ انکا انجام بھی ستار جیسا ہوگا.

مزید خبریں اسی بارے میں

Close