پاکستان میں فوجی غندہ گردی، میجر کا تیسری کلاس کے بچے پر شدید تشدد

نیوز ڈیسک (ریپبلکن نیوز) خیبرپختونخواہ کے علاقے ڈیرہ اسماعیل خان میں ایک فوجی افسر نے اپنی بیگم کے ہمراہ اسکول میں داخل ہوکر ایک معصوم بچے کو انتہائی تشدد کا نشانہ بنایا ہے۔

تفصیلات کے مطابق میجر ارباب نامی فوجی افسر نے اپنے بیگم کے ہمراہ ڈیرہ اسماعیل خان میں سٹی اسکول میں داخل ہوکر اپنے بچے کو انتہائی حد تک تشدد کا نشانہ بنایا۔ فوجی افسر کی بیوی نے نے بچے کو ماں بہن کی گالیاں دی جبکہ میجر ارباب نے بچے کو تشدد کا نشانہ بنایا۔

زرائع کا کہنا ہے فوجی میجر کے بچے کا اسکول میں ایک بچے کے ساتھ جھگڑا ہوا تھا جس پر بچے کا باپ میجر ارباب نے اسکول میں آکر خود بچے کو تشدد کا نشانہ بنایا۔ میجر ارباب نے تیسری کلاس کے بچے کو تھپڑوں اور لاتوں سے انتہائی تشدد کا نشانہ بنایا۔

دوسری جانب فوجی اہلکار کے اور انکی بیگم کے خلاف بچے پر تشدد کے واقعہ کا تاحال کسی بھی قانون نافذ کرنے والے ادارے نے نوٹس نہیں لیا ہے۔ پاکستانی میں بظاہر تو جمہوری حکومت ہے لیکن حقیقت یہی ہے کہ پاکستان میں حکمرانی فوجی ٹولے کی ہے جو جب جو چاہے کرسکتے ہیں انہیں روکنے والا کوئی نہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button