لاہور: بیٹی کو پسند کی شادی سے روکھا تو مجھ پر جنسی زیادتی کا الزام لگاکر گرفتار کروادیا

لاہور(ریپبلکن نیوز) صنفی تشدد کی خصوصی عدالت نے بیٹی سے زیادتی کے مقدمے میں ملوث ملزم باپ کو مدعی خاتون سے سمجھوتہ ہونے کی بنا پر بری کر دیا۔

صنفی تشدد کی خصوصی عدالت کے جج ایڈیشنل سیشن جج رحمت علی کی جانب سے فیصلہ سنایا گیا۔ متاثرہ لڑکی رابعہ نے عدالت میں اپنے بیان میں کہا کہ اس کی شادی ہو گئی ہے اور وہ اب کیس کی پیروی کرنا نہیں چاہتی، اس نے ملزم کو اللہ کی رضا کی خاطر معاف کر دیا ہے اگر ملزم کو مقدمے سے بری کر دیا جائے تو کوئی اعتراض نہیں ہو۔

ملزم باپ دلاور نے بیان دیا کہ پسند کی شادی سے منع کرنے پر بیٹی نے زیادتی کا الزام لگایا تھا۔ عدالت نے ملزم کو متاثرہ لڑکی کے بیان کی روشنی میں بری کرنے کا حکم دے دیا۔

ملزم دلاور کے خلاف تھانہ جنوبی چھاونی پولیس نے اپنی 20 سالہ بیٹی سے زیادتی کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کیا تھا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button