آزاد کردستان کے لیے ریفرنڈم 25 ستمبر کو ہی ہوگا۔مسعود بارزانی

  نیوزڈیسک (ریپبلکن نیوز) عراق کے کُرد اکثریتی صوبہ کردستان کے وزیر اعلیٰ مسعود بارزانی نے کہا ہے کہ آزاد کردستان کا ریفرنڈم ہرصورت میں اپنے وقت مقررہ پر ہی ہوگا۔ اس حوالے سے عراقی پارلیمان کے فیصلے کی کوئی اہمیت نہیں۔ خیال رہے کہ دو روز قبل عراقی پارلیمنٹ میں کردستان کی آزادی کے لیے ہونے والے ریفرنڈم کی مخالفت کی گئی تھی تاہم اربیل نے بغداد کی پارلیمان میں ہونے والی تنقید کو مسترد کردیا تھا۔

مسعود بارزانی نے کہا کہ آزاد کردستان کے لیے ریفرنڈم 25 ستمبر کو ہوگا۔ اس تاریخ میں کوئی تبدیلی نہیں کی جائے گی۔

خیال رہے کہ عراقی پارلیمنٹ کی بھاری اکثریت نے کردوں کی الگ ریاست کے قیام کے لیے ریفرنڈم کو مسترد کردیا تھا تاہم پارلیمان کے اجلاس میں موجود کرد ارکان نے ریفرنڈم کی مخالفت کے لیے پیش کردہ قرارداد پر رائے شماری کے دوران واک آوٹ کردیا تھا۔

عراقی پارلیمان کے اسپیکر سلیم الجبوری نے کہا کہ پارلیمنٹ کی جانب سے کردستان میں آزادی کے ریفرنڈم کی مخالفت دراصل عراق کی وحدت کی خواہش کا اظہار ہے۔ ہم سب ایک قوم اور ہمارا ملک عراق ہے۔ اسپیکرنے وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ وہ عراق کی وحدت برقرار رکھنے کے لیے کرد آبادی اور صوبہ کردستان کے جائز مطالبات پورے کرنے کے ساتھ ان کے تحفظات دور کریں۔ نیز صوبہ کردستان کی قیادت اور بغداد کے درمیان بامقصد بات چیت کا آغاز کیا جائے تا کہ عراق کو ٹوٹنےسے بچایا جاسکے۔

عراق کے صوبہ کردستان کی سیاسی جماعتوں نے 7 جون کو ایک مشترکہ اجلاس کے دوران آزاد کردستان کی خاطر 25 ستمبر 2017ء کو ریفرنڈم کرانے سے اتفاق کیا تھا تاہم کردوں کے اس اعلان کی عراقی حکومت اور دیگر کئی ممالک نے مخالفت کی تھی۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close