متحدہ قومی موومنٹ کا گھیرا مزید تنگ کرنے کے لیے ایف آئی اےنے دس رہنماؤں کو طلب کرلیا

کراچی(ریپبلکن نیوز) متحدہ قومی موومنٹ کے بانی الطاف حسین کے خلاف گھیرا مزید تنگ کرنے کے لیے فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) نے منی لانڈرنگ کیس میں ایم کیو ایم کے دس رہنماوں کو طلب کرلیا۔

 ذرائع کے مطابق ایف آئی اے نے ایم کیو ایم کے 10 اہم رہنماوں کو طلب کر لیا ہے۔ ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ رہنما پیسے جمع کر کے خدمت خلق فاؤنڈیشن کے ذریعے لندن بھجواتے تھے۔ طلب کیے جانے والے رہنماؤں میں ڈاکٹر صغیر احمد، محمد شاہد، محمد زبیر شامل ہیں۔ ایم کیو ایم کے بانی اور کارکنوں کے گرد گھیرا مزید تنگ کیا جا رہا ہے۔

 ایم کیو ایم کے 10 رہنماؤں کو ایف آئی اے انسداد دہشتگردی ونگ میں پیشی کے نوٹس بھیج دیئے گئے ہیں۔ متحدہ پر 2 ارب روپے خدمت خلق فاؤنڈیشن کے ذریعے لندن بھجوانے کا الزام ہے۔ ایف آئی اے نے ایم کیو ایم کے جن رہنماؤں کو طلب کیا ہے ان میں ڈاکٹر صغیر احمد جو اب پی ایس پی میں جا چکے ہیں، محمد شاہد، محمد زبیر، محمد طاہر، رؤف مغل، منظور احمد، کیف الورا، محمد عمران، رفیق راجپوت اور کمال صدیقی شامل ہیں۔

ایف آئی اے نے موقف اختیار کیا ہے کہ ایم کیو ایم رہنماء چائنہ کٹنگ اور بھتے کے پیسے خدمت خلق فاؤنڈیشن میں جمع کرواتے تھے جو وہاں سے ایم کیو ایم لندن سیکریٹریٹ بھجوا دیئے جاتے تھے جہاں کروڑوں روپے ذاتی عیاشی، وکلاء کی فیس اور سکیورٹی پر صرف کئے جاتے تھے۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker