زامران سے ملحقہ ایرانی بارڈر فورس کے چیک پوسٹ پر حملے میں دو بلوچ فرزند شہید

کوئٹہ(ریپبلکن نیوز) بلوچستان کے ضلع کیچ کے علاقے زامران سرکی زا سے ملحقہ ایرانی بارڈری علاقے میں قائم ایرانی فوج کے کیمپ پر حملے میں دو بلوچ فرزندوں کی شہادت کی اطلاعات ہیں۔

خیال رہے کہ کل زامران کے ایران سے متحصل بارڈری علاقے دراب و کوہ سر کے نزدیک نامعلوم مسلح افراد نے ایرانی فورسز کے ایک کیمپ کو مغرب کے وقت نشانہ بنایا تھا۔ حملے میں دونوں جانب جانی و مالی نقصانات ہوئے ہیں۔

ریپبلکن نیوز کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق اس حملے میں دو بلوچ بھی شہید ہوئے ہیں جو کیمپ پر حملے میں ملوث تھے۔ جبکہ حملہ آوروں کی کیمپ پر قبضہ کرنے کی کوشش کو ایرانی بارڈر فورسز نے ناکام بناتے ہوئے کیمپ کو محفوظ کردیا ہے لیکن دونوں جانب جانی نقصانات ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں:  زامران سے ملحقہ ایرانی بارڈر فورس کے چیک پوسٹ پر مسلح افراد کا شدید حملہ 4 اہلکارہلاک

اب تک مصدقہ اطلاعات نہیں ہیں کہ دونوں جانب کتنی ہلاکتیں ہوئی ہیں ، جبکہ ایک حملہ آور کی تصویر ریپبلکن نیوز کو موصول ہوگئی ہے جس میں بلوچ فرزند کو ایرانی فورسز نے متدد گولیاں مار کر شہید کردیا ہے۔ جبکہ علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ ایک اور حملہ آور کی نعش پہاڑوں پر پڑی ہے۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close