شام، افغانستان اور دیگر جنگ زدہ ممالک کی طرح بلوچستان میں بھی لوگوں کا قتلِ عام ہو رہا ہے

جنیوا(ریپبلکن نیوز) بلوچستان کے حالات انتہائی گھمبیر ہیں، شام، افغانستان اور دیگر جنگ زدہ ممالک  کی طرح بلوچستان میں بھی لوگوں کا قتلِ عام کیا جا رہا ہے۔ لوگوں کو اغوا بعد شہید کردیا جاتا ہے۔

ان خیالات کا اظہار بلوچ ریپبلکن پارٹی کی مر کزی رہنما اور پارٹی کے سوئٹزرلینڈ کے صدر شیر باز بگٹی نے ریپبلکن نیوز سےبات کرتے ہوئے کیں ہے۔

شیر باز بگٹی نے اقوامِ متحدہ کے دفتر کے سامنے بی آر پی کی جانب سے بدھ کو ہونے والے احتجاجی مظاہرے کے دوران ریپبلکن نیوز کے نمائندے کو اپنے دیئے گئے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ سوئٹزرلینڈ میں ہونے والے احتجاجی مظاہرے کا مقصد بلوچستان میں ہونے والی ریاستی دہشتگردی کو اجاگر کرنا ہے۔ کیونکہ ریاستی فورسز اور خفیہ اداروں کے اہلکار نہتے لوگوں کو اغوا کرنے کے بعد شدید زہنی و جسمانی تشدد سے گزارنے کے بعد شہید کر دیتے ہیں۔

اسی بارے میں:

اقوامِ متحدہ کے 37ویں سیشن کے دوران بلوچ ریپبلکن پارٹی کی مہم آج تیسرے روز بھی جاری رہی

بی آر پی کی جانب سے اقوامِ متحدہ کے سیشن کے دوران آج دوسرے روز بھی سرگرمیاں جاری رہیں

عالمی ادارے پاکستان کو انصاف کے کٹہرے میں لاتے ہوئے بلوچوں کے قتل عام کا نوٹس لیں۔ عبدالنواز بگٹی

انہوں نے کہا ہے کہ پاکستانی آرمی والے لوگوں کو اغوا کرنے کے بعد انہیں تشدد کے بعد ہیلی کاپٹروں سے نیچے پھینک دیتے ہیں، جبکہ ان تمام تر مظالم کے باوجود بھی انسانی حقوق کے ادارے، مہذب دنیا اور اقوامِ متحدہ خاموش تماشائی کا کردار ادا رہے ہیں۔

 

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker