برہان وانی کی ہلاکت کے بعد مقبوضہ کشمیر میں حالات کشیدہ

سری نگر(ریپبلکن نیوز)  کشمیر کے رہنما برہان وانی کی ہلاکت کے بعد مقبوضہ وادی کے مختلف علاقوں میں ہونے والے مظاہروں پر بھارتی فوج کی فائرنگ سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 17 ہو گئی جب کہ انتظامیہ نے وادی میں کرفیو نافذ کر کے حریت رہنماؤں کو گھروں میں نظر بند کررکھا ہے۔
بھارتی میڈیا کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں تحریک آزادی کشمیر کے رہنما برہان وانی کی 2 ساتھیوں سمیت ہلاکت کے بعد مقبوضہ جموں کشمیر کے کئی علاقوں میں مظاہروں کا سلسلہ دوسرے روز بھی جاری ہے جب کہ سری نگر، کپواڑہ اور پلوامہ سمیت وادی بھر میں کاروباری سرگرمیاں مکمل طور پر معطل ہیں۔

یاد رہے کہ مقبوضہ کشمیر کے حریت رہنماؤں کو پاکستانی خفیہ اداروں اور حکومت کی مکمل حمایت حاصل ہے۔اور بھارتی حکام متعدد بار پاکستان موردالزام ٹہراتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی خفیہ ادارے مقبوضہ کشمیر میں حالات کو خراب کرنے میں ملوث ہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close