صدارتی نامزدگی،اوباما کی ہیلری کی باضابطہ حمایت

Hailryواشنگٹن(ریپبلکن نیوز) امریکی صدر براک اوباما نے عہدہ صدارت کے لیے ڈیموکریٹک امیدوار ہیلی کلنٹن کی باضابطہ طور پر حمایت کردی، انہوں نے تمام ڈیموکریٹس سے اپیل کی ہے کہ وہ ہیلری کی حمایت کے لیے متحد ہوجائیں۔

امریکی صدر نے کہا کہ وہ نہیں سمجھتے کہ عہدہ صدارت کے لیے ماضی میں کوئی امیدوار اتنا اہل رہا ہوگا جتنی ہیلری کلنٹن ہیں۔

ہیلری کلنٹن کی انتخابی مہم کی جانب سے جاری وڈیو میں براک اوباما کو یہ کہتے ہوئے دکھایا گیا ہے کہ ‘میں بہت پرجوش ہوں اور ہیلری کے ساتھ ہوں، مجھ سے صبر نہیں ہورہا کہ میں باہر نکلوں اور ہیلری کلنٹن کے حق میں مہم چلاؤں۔

ہیلری کلنٹن نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ امریکی صدر براک اوباما کی حمایت حاصل ہونا اعزاز کی بات ہے۔

براک اوباما کی جانب سے ہیلری کی حمایت کے بعد صدارتی نامزدگی کے دوسرے امیدوار امریکی سینیٹر برنی سینڈرز پر دستبرداری کے حوالے سے دباؤ بڑھ گیا ہے تاکہ ڈیموکریٹک پارٹی ری پبلکن امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مہم پر مکمل توجہ مرکوز کرسکے۔

ہیلری کلنٹن کی جانب سے رواں ہفتے مطلوبہ مندوبین کی حمایت حاصل کیے جانے کے بعد اس بات کا امکان تھا کہ امریکی صدر کلنٹن کی حمایت کریں گے، اوباما ووٹرز میں اب بھی مقبول ہیں اور توقع ہے کہ ان کی حمایت سے ہیلری کلنٹن کو بہت فائدہ پہنچے گا۔

یاد رہے کہ 2008 میں صدارتی انتخاب کیلئے ہونے والے پرائمری الیکشن میں اوباما اور ہیلری کلنٹن حریف تھے، اس وقت اوباما نے کامیابی حاصل کی تھی، بعد ازاں کلنٹن اوباما کے پہلے دور حکومت میں بطور امریکی وزیر خارجہ کام کرتی رہیں۔

برنی سینڈرز نے وائٹ ہاؤس میں براک اوباما سے ملاقات کے بعد کہا کہ وہ ٹرمپ کو شکست دینے کیلئے ہیلری کلنٹن کے ساتھ مل کر کام کریں گے۔

سینڈرز نے یہ بھی کہا کہ وہ فی الحال صدارتی انتخاب کیلئے نامزدگی کی دوڑ سے دستبردار نہیں ہوں گے اور ڈیموکریٹک پارٹی کے 14 جون کو واشنگٹن میں ہونے والی پرائمری الیکشن میں حصہ لیں گے۔

علاوہ ازیں میساچیوسٹس سے سینیٹر الزبتھ وارین نے بھی ہیلری کلنٹن کی حمایت کا اعلان کردیا ہے، انہوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کو امریکی سلامتی کیلئے بڑا خطرہ قرار دیا۔

ان کا دعویٰ ہے کہ اس میں وال اسٹریٹ کا استحکام اور درمیانی آمدنی والے طبقے کیلئے ٹیکس میں کمی جیسے منصوبے شامل ہوں گے۔

ہیلری نے مزید کہا کہ میں وائٹ ہائوس میں اچھی شروعات کی اہمیت سے واقف ہوں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close