فری بلوچستان موومنٹ کی جانب سے جرمنی آگاہی مہم جاری

نیوز ڈیسک (ریپبلکن نیوز) جرمنی دستخطی مہم آج جرمن صوبے نارتھ ویسٹ فالیا کے شہر وُوپرتال میں منعقد ہوئی جو مزید دو دن تک جاری رہیگی۔ فری بلوچستان موومنٹ کی جانب سے جرمنی میں منعقد کردہ دستخطی مہم بعنوان “ بلوچستان نہ پاکستان اور نہ ہی ایران” آج سے تین دن کے لئے وُوپرتال کے سیٹی سینٹر کے سامنے منعقد ہوئی جو اپنے پہلے دن انتہائی کامیاب رہی۔ آج مہم کے آغاز سے ہی عوام کا رش لگا رہا جنہوں نے بڑی تعداد میں فری بلوچستان موومنٹ کے موقف کی حمایت کرتے ہوئے پیٹیشن پر دستخط کئے۔

اس دوران شرکاء نے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اپنی انسانی ذمہ داری کے تحت بلوچ عوام کے ساتھ ہونے والے ظلم و ستم کے خلاف آواز اٹھانی چاہئے تاکہ اس انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں والی صورتحال کو روکنے میں اپنا کردار ادا کرسکیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ بلوچستان میں بسنے والے بلوچ بھی انسان ہیں اور ان کے بھی وہی حقوق ہیں جو دنیا کے کسی کونے میں بسنے والے انسانوں کے ہیں مگر جس طرح سے قابضین نے ظلم و ستم کے بازار گرم کر رکھے ہیں تاکہ بلوچ عوام کو ان کی آزادی کی تحریک سے دور رکھ کر ان کی تحریک کو کچلا جا سکے، انتہائی قابل مذمت ہے اور اس پر ہنگامی بنیادوں پر دنیا کے مہذب اقوام و قوتوں کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئیے تاکہ بلوچستان کی خون آلود سرزمین پر بسنے والے انسان بھی اپنے بنیادی حقوق حاصل کرسکیں اور ایک آزاد فضا میں اپنی زندگی آزادی و خودمختاری سے گزارنے کے قابل ہو سکیں۔

فری بلوچستان موومنٹ نے میڈیا کو جاری کردہ تفصیلات میں بتایا کہ یہ مہم وُوپرتال میں مزید دو دن جاری رہیگی جس کے بعد یہ مہم کسی اور شہر میں منعقد ہوگی جس کا جلد اعلان کیا جائےگا۔The signature

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button