پنجاب میں گیس پائپ لائن اڑانے و کیچ میں فورسز پر حملے کی زمہ داری بی آر اے نے قبول کر لی

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز)  بلوچ ریپبلکن آرمی کے ترجمان سرباز بلوچ نے میڈیا کو جاری بیان میں کہا ہے کہ گزشتہ رات سوئی سے پنجاب جانے والی ۳۶ انچ قطر کی گیس پائپ لائن کو پنجاب کے علاقے صادق آباد میں دھماکہ خیز مواد سے تباہ کیا۔ دھماکے کےنتیجے میں سوئی پلانٹ سے پورے پنجاب کو گیس کی سپلائی معتطل ہوگئی

سر باز بلوچ نے مزید کہا ہے کہ  گزشتہ سال دسمبر کو ہمارے سرمچاروں نے اسی گیس پائپ لائن کو دھماکے سے اڑانے کی کوشش کی تھی جو ناکام ہوا تھا لیکن اس مرتبہ پنجاب کے اسی گیس پائپ لائن کو تباہ کردیا ہے۔

ترجمان نے مزید کہا ہے کہ بلوچ ریپبلکن آرمی گیس پائپ لائن کو تباہ کرنے کی زمہ داری قبول کرتی ہے۔

انھونے مزید کہا ہے کہ ہم یہ بھی واضع کرتے ہیں کہ بلوچستان سے نکلنے والے وسائل بلوچ قوم کی ملکیت ہیں اور انکی لوٹ مار کو روکنے کے لئے ہم پاکستان کے کسی بھیکونے میں انکو نشانہ بنائینگے۔

سرباز بلوچ نے مزید کہا ہے کہ گزشتہ روز کیچ کے علاقے تمپ میں مزن بند کے پہاڑی سلسلے کو دو اطراف سے گھیرے میں لیکر ہیلی کاپٹروں کی مدد سے بلوچ سرمچاروں کو محاصرے میں لینے کی کوشش کی تاہم بی آر اے کے سرمچاروں نے گوریلا حکمت عملی کو بروئے کار لاتے ہوئے فورسز کا گھر توڑا اس دوران بلوچ سرمچاروں کے فورسز کے جھڑپ ہوئی جس کے نتیجے میں فورسز کے متعدد اہلکار ہلاک و زخمی ہوگئے۔ جبکہ بی آر اے کے تمام ساتھی باحفاظت نکلنے میں کامیاب ہوگئے۔ جس کے بعد حواس باختہ فورسز نے عام باسیوں کو نشانہ بنایا جس کے باعث عام لوگوں کے نقصانات کی اطلاعات ہیں۔

سرباز بلوچ نے کہا ہے بلوچ ریپبلکن آرمی کی کاروائیاں آزاد کو خود مختار بلوچ ریاست کے قیام تک جاری رہیں گے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close