میجر جنرل خالد ضیا کا بلوچستان میں مکمل امن قائم کرنے کا جھوٹا دعوہ

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز)  جنرل آفیسر کمانڈنگ 33 ڈیو میجر جنرل خالد ضیاء نے کہا ہے کہ سی پیک کا منصوبے کا بلوچستان کی تعمیر و ترقی میں اہم کردار ہوگا ،روزگار کے مواقع پیدا ہونگے ،زرائع آمد رفت میں عوام کو سہولیات میسر آئیں گی ،بلوچستان میں امن قائم ہو چکا ہے ترقی کا پہیہ چل پڑا ہے ،خوشحالی کی ابتداء ہو گئی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے خضدار گریژن میں قبائلی عمائدین ،سیاسی پارٹیوں کے مقامی عہدیداروں سے خطاب کے دوران کیا اس موقع پر ڈپٹی کمشنر خضدار میجر (ر) محمد الیاس کبزئی ،کمانڈنٹ قلات اسکاوٹس کرنل ارشد محمود ملک ،ڈی آئی جی پولیس قلات رینج ،ایس ایس پی خضدار و دیگر بھی موجود تھے ۔

میجر جنرل خالد ضیاء نے کہا کہ عوام کے تعاون ،پاکستان سے بے پناہ محبت اور مسلح افواج کی کاوشوں کی بدولت آج بلوچستان میں ا من قائم ہو نے کے ساتھ ساتھ ترقی کا سفر بھی شروع ہو چکا ہے یہاں کے لوگ پر امن ماحول میں زندگی بسر کر رہے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ سی پیک ملک کا ایک اہم منصوبہ ہے اور خضدار سی پیک روٹ کے سنگم پر واقعہ ہے اس لحاظ سے خضدار کی اہمیت بہت زیاد ہ اور نمایاں ہے، اب خضدار بیسیمہ روڈ پربھی کنسٹریکشن کاآغاز ہونے والا ہے جس سے مذید ایک اور شاہراہ کا اضافہ بھی ہوگا، ہماری کوشش ہے کہ ہم بھی خضدار کی تعمیر و ترقی میں اپنا حصہ ڈالیں تعلیم و صحت کے مسائل کا جائزہ لینے کے ساتھ انہیں حل کرنے کی ہر ممکن کوشش کر رہے ہیں ۔

میجر جنرل ضیاء خالد کا کہنا تھا کہ بلوچستان اپنے معدنی وسائل اور جغرافیہ کے اعتبارسے منفرد مقام اور شناخت رکھتا ہے سی پیک جیسی اہم منصوبہ سے بلوچستان میں ترقی کا نیا باب کھلے گا ۔

خیال رہے کہ پاکستانی عسکری ادارے ہمیشہ سے ہی جھوٹ کا سہارہ لیتے ہوئے لوگوں کو بے وقوف بنانے کی کوشش کرتے ہیں، جبکہ حقیقت یہ ہے کہ بلوچستان اس وقت حالتِ جنگ میں ہے جہاں ہائے روز بلوچ مزاحمتکاروں اور پاکستانی فورسز کے درمیان جھڑپیں ہوتے ہیں۔

دوسری  جانب بلوچستان میں ریاستی عسکری اداروں کے جنگی جرائم بھی عروج پر ہیں، ہائے روز نہتے بے گناہ بلوچ فرزندوں کو اغوا کیا جاتا ہے جنہیں سالہا سال ٹاچر سیلوں میں اذیتوں سے گزارنے کے بعد شہید کیا جاتا ہے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close