دنیا کا پہلا تھری ڈی پرنٹڈ طیارہ متعارف

jet(ریپبلکن نیوز) تھری ڈی پرنٹنگ ٹیکنالوجی تیزی سے ترقی کررہی ہے اور کمپنیاں اس سے مختلف اشیاءتیار کررہی ہیں تاہم اب پہلی بار اس کی مدد سے ایک تھری ڈی طیارہ بھی پرنٹ کرلیا گیا ہے۔

جی ہاں یورپی کمپنی ائیربس نے ایک چھوٹا طیارہ تھور تیار کیا ہے جو کہ دنیا کا پہلا تھری ڈی پرنٹڈ جہاز ہے۔

یہ چھوٹا طیارہ برلن ائیر شو کے دوران متعارف کرایا گیا۔

بغیر کھڑکیوں کے اس طیارے کا وزن 21 کلو ہے اور اس کی لمبائی چار میٹر سے بھی کم ہے۔

کمپنی ا کہنا ہے کہ یہ اس بات کی عکاسی کرتا ہے کہ تھری ڈی پرنٹنگ ٹیکنالوجی کی مدد سے کیا کچھ ممکن بنایا جاسکتا ہے۔

کمپنی کا کہنا تھا کہ ہم یہ دیکھ رہے کہ تھری ڈی پرنٹنگ کی مدد سے صرف انفرادی سطح پر پرزے نہیں بلکہ پورے سسٹم کو کیسے تیار کیا جاسکتا ہے۔

بظاہر ایک ماڈل نظر آنے والا یہ طیارہ بغیر پائلٹ کے پرواز کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور اس سے عندیہ ملتا ہے کہ مستقبل میں تھری ڈی ٹیکنالوجی کی مدد سے طیاروں کی تیاری کے لیے وقت، ایندھن اور پیسوں کو بچایا جاسکے گا۔

یہ طیارہ مکمل طور پر تھری ڈی پرنٹڈ ہے ماسوائے اس کے برقی عناصر ہے۔

اس وقت ائیربس اور بوئنگ جیسی کمپنیاں تھری ڈی پرنٹر کو کچھ طیاروں کے پرزوں کی تیاری کے لیے استعمال کررہی ہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close