چمن شہر کو ایف سی کے حوالے کرنے کی سخت مذمت کرتے ہیں. آل پارٹیز

 FCچمن(ری پبلکن نیوز )چمن شہر کو ایف سی کے حوالے کرنے کی سخت مذمت کرتے ہیں آل پارٹیز جمعیت علماء اسلام، پشتونخوا میپ، عوامی نیشنل پارٹی،پاکستام مسلم لیگ (ق)،جماعت اسلامی،تحریک انصاف ،اہلسنت و الجماعت ،انجمن تاجران ،انجمن تاجران و دوکانداران ،سول سو سائٹی ،چمن شہری ایکشن کمیٹی قبائلی رہنماوں نے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ چمن و ضلع قلعہ عبد اللہ میں لاتعداد انتظامیہ موجود ہے جس میں پولیس ،لیویز اور دیگر ادارے ڈیوٹیاں سر انجام دے رہے ہیں حکومت پاکستان سے کروڑوں روپے کی مد میں تنخوائیں لے رہے ہیں پولیس و لیویز چمن شہر میں امن ومان کی صورتحال کو کنٹرول نہ کرنے کی وجہ نااہل آفیسران ہے چمن شہر میں امن و امان کی صورتحال کو خراب کرنے میں چند لوگ ملوث ہے جو سوچھے سمجھے پلان کی تحت حالات خراب کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہے جس کی وجہ سے بد امنی، اغوا برائے تاوان اور دیگر کرائم میں روز بروز اضافہ ہوتا جارہا ہیں ایک مہینے کے اندر اندر 6افراد اغوا ہوئے ہے جس میں دو افراد کو تاوان ادا کرے کے بعد رہا کیا گیا اور ابھی تک دو مغوی حاجی شیر خان اچکزئی اور اسد ترین ابھی تک اغوا کاروں کے قید میں ہے لیکن ابھی تک انتظامیہ خاموش تماشائی بن گئی ہیں نہ کوئی ڈاکو اور نہ ہی کوئی اغوا کار ابھی تک پکڑا گیا ہے آل پارٹیز کی کال پر درہ کوژک کو غیر معینہ مدت تک بند کیا گیا ہے اس احتجاج کوجواز بناکر بعض عناصر نا جائز فائدہ اٹھاتے ہوئے چمن شہر کو ایف سی کے حوالے کرنے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں آل پارٹیز اور انجمن تحریکیں چمن شہر کی ایف سی کے حوالے کرنے کی سخت مذمت کریں گے اور کسی بھی صورت چمن شہر کو ایف سی کے حوالہ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close