کشمیر پر فیصلہ کرنے کا حق صرف کشمیریوں کا ہے۔ صدر پاکستان

نیوزڈیسک (ریپبلکن نیوز) پاکستان کے صدر مملکت عارف علوی کا کہنا ہے کہ کشمر اور کشمیریوں کے فیصلوں کا حق صرف اور صرف کشمیریوں کو کرنے کا حق ہے۔

کشمیر یکجہتی دن کی مناسبت سے قانون ساز اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان کے صدر ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا تھا برصغیر ک تقسیم کے وقت پاکستان اور کشمیر کے ساتھ ناانصافی اور سازش کی گئے اور باؤنڈری کمیشن نے مسلم اکثریتی علاقوں کو بھارت کے حوالے کیا،باٶنڈری کمیشن نے سوچے سمجھے منصوبے کے تحت سازش کی جس کا خمیازہ لوگ ابھی تک بھگت رہے ہیں۔

صدر نے کا دہائیوں سے کشمری بھائی ظلم کی ضد میں ہیں اور ظلم سہ رہے ہیں،اس لیے میں کہتا ہوں کہ کشمر پر اور کشمیریوں سے وابسطہ تمام فیصلوں کا حق صرف کشمیر والوں کو ہے جبکہ کشمیر کے حوالے سے پاکستانی سیاستدانوں میں کوئی اختلاف نہیں۔

ڈاکٹر عارف علوی کا مزید کہنا تھا وزیراعظم عمران خان نے بھارت کی جانب دوستی کا ہاتھ آگے بڑھایا لیکن قابض ریاست بات چیت سے بھاگتی ہے ،بھارت سے جب بھی بات چیت کا کہا اس نے کوٸ نہ کوئی بہانہ بنا دیا اور ہم کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی بلا تفریق حمایت کرتے ہیں اور کرتے رہیں گے۔

پاکستانی حکمرانوں کی منافقت کا انداز ہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ بلوچستان میں رہنے والے بلوچ بھی مسلمان ہیں جو گزشتہ کئی دہائیوں سے حقِ خود ارادیت کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں جنہیں پاکستانی حکمران اور فوجی طبقہ غدار اور دہشتگرد جیسے القابات سے نوازتے ہیں۔ اگر کشمیری مسلمانوں کے لیے حق خود ارادیت کے حق کو پاکستان تسلیم کرتی ہے تو یہی حق بلوچوں ، سندھیوں اور پشتونوں سمیت دیگر تمام اقوام کو حاصل ہونا چاہیے۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button