ساھجی میں انجیئنرز اور ٹھیکداروں کی ہلاکت شیلنگ, اور زہریلی پانی پینے سے ہوئی ہے. کمشنر مکران

RNN3کیچ (ریپبلکن نیوز) کمشنرمکران بشیراحمدبنگلزئی کی تربت میں میڈیا کو بریفنگ.
بشیر احمد بنگلزئی نےکہا کہ ہمیں تحقیقات سے پتہ چلا ہے کہ سائیجی میں انجینیئرز اورٹھیکیداروں کی موت ملٹری کی شلنگ، کیمیکل گیس اور سلوپوائزن ملاپانی پینے سے ہوئی ہے.

یہ تاثربالکل غلط ہےکہ میں نےانہیں اسکیموں کی معائنہ کیلئےدشت بھیجا تھا۔

صوبائی حکومت نےکمشنرمکران کی سربراہی میں انکوائری کمیٹی تشکیل دی تھی۔ بعدازاں میں نےکمیٹی کے ممبران محکمہ سی اینڈ ڈبلیو مکران کےایس ای، ایکسیئن سی اینڈ ڈبلیوکیچ اورایریگیشن مکران کےایس ای کوبلاکرکہاکہ آپ خودجاکرانکوائری کرلیں۔

مگر بعد میں پتہ چلاانہوں نےدوسروں کوبھیجاہے۔ لواحقین کےکہنےپرسائجی پہاڑپرآپریشن رکوانےکیلئےاعلی حکام سے بھی بات کی تھی۔ مگر وہ نہیں مانے.

لاشوں کی برآمدگی کیلئےضلعی انتظامیہ کیچ سےکوتائی ہوئی ہے۔ ڈی سی کو وہاں کیمپ لگواناچاہئےتھا۔

سرکاری سطح پران پانچویں افرادکوشہید قراردیا جارہاہے۔ شہید انجینئرزکی تنخواہیں جاری رہیں گی۔ جبکہ ٹھیکیداروں کےلواحقین کو 10،10لاکھ روپے دیاجائیگا،
ٹھیکیدارچاکربلوچ کےبیٹےکی تعلیمی اخراجات ضلعی انتظامیہ برداشت کریگی۔شہداءہائوسنگ اسکیم گوادرمیں پانچویں شہداءکےلواحقین کوایک ایک پلاٹ دیاجائیگا۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close