بلوچستان لبریشن فرنٹ نے تین فوجی اہلکاروں اور مخبر کے ہلاکت کی زمہ داری قبول کرلی

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچ آزادی پسند مسلح تنظیم بلوچستان لبریشن فرنٹ کے ترجمان گہرام بلوچ نے قابض پاکستانی فورسز کے اہلکاروں پر حملے کی زمہ داری قبول کرلی۔

گہرام بلوچ نامعلوم مقام سے سٹیلایئٹ فون کے ذریعے بات کرتے ہوئے کہا کہ کل کولواہ کے علاقے مالار زیرک میں قابض فوج نے سرمچاروں کی گشتی ٹیم کا پیچھا اور گھیرنے کی کوشش کی تو قابض فوج اور سرمچاروں کے درمیان جھڑپ شروع ہوئی ۔ جھڑپ میں سرمچاروں نے بہترین گوریلا حکمت عملی سے پاکستان فوج کامقابلہ کرکے تین فوجی اہلکاروں کو دوبدو جنگ میں ہلاک کیا۔ اور تمام سرمچار بحفاظت نکلنے میں کامیاب ہوئے۔

بی ایل ایف سے رہائی پانے والے شخص کو فورسز نے قتل کردیا 

گہرم بلوچ نے کہا کہ تیس دسمبر کو سرمچاروں نے کولواہ کے علاقے مالار مچی سے ریاستی مخبر صادق ولد ابراہیم کو گرفتار کیا۔ دوران حراست پوچھ گچھ اور تفتیش میں اس نے اعتراف کیا کہ وہ سرمچاروں کی مخبری میں ملوث ہے۔ اقبال جرم کے بعد اُسے موت کی سزا دیکر ہلاک کیا۔ اس نے اپنے ساتھیوں کے نام اور کارروائیوں میں ملوث ہونے کی تفصیلات بھی دی ہیں۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close