پولیس کا دہشتگردی کا بڑا منصوبہ ناکام بنانے کا دعوہ، جیش العدل کے چار افراد گرفتار

کوئٹہ (ریپبلکن نیوز) بلوچستان کے ضلع کیچ کے علاقے تربت میں پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے تخریب کاری کا بڑا منصوبہ ناکام بنانے کا دعوہ کیا ہے۔  حراست میں لیے گئے افراد کا تعلق جیش العدل سے بتایا جا رہا ہے۔ ڈی پی او کیچ جمیل احمد زہری

پولیس زرائع کے مطابق مغوی شخص کی نشاندہی پر تربت پولیس نے سیٹلائٹ ٹاون میں ایک بنگلے  پر چھاپہ مارتے ہوئے بھاری مقدار میں اسلحه، گولہ بارود اور دیگر تخریب کاری مواد برآمد کر کے قبضے میں لے لیا ہے۔

جبکہ کاروائی میں تین افراد کو حراست میں بھی لیا گیا ہے جن سے جیش العدل کے پمفلٹس بھی برآمد کیئے گئے ہیں۔

مغوی محمد سیعد کو پانچ دن قبل تربت بازار سے ریاستی اداروں کے اہلکاروں نے اغوا کیا تھا، جبکہ مغوی کی نشاندہی پر پولیس نے کاروائی کرتے ہوئے مغوی کے دیگر ساتھیوں کو اسلحہ و دیگر تخریب کاری کے مواد سمیت حراست میں لینے کا دعوہ کیا ہے۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close