بلوچستان میں مشرق اور مغرب سے سخت چیلنجز ہیں، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی

ویب ڈیسک  ( ریپبلکن نیوز)وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بلوچستان میں مشرق اور مغرب سے سخت چیلنجز ہیں،بلوچستان میں بیرون مداخلت ہو رہی ہے وہاں پر زیادہ توجہ دے رہے ہیں ،موجودہ صورتحال میں قومی اتفاق رائے کی ضرورت ہے،آصف زرداری اور شہباز شریف سے فون پرمشاورت کی.

اسلام آباد میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بلوچستان میں سخت مشکلات کا سامنا کرنا پرھ رہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بلوچستان میں بیرونی مداخلت پر زیادہ توجہ دینی ہوگی۔

پاکستان کے وزیر خارجہ کا بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب بلوچ مسلح علیحدگی پسندوں نے بلوچستان بھر میں اپنی کاراوئیوں میں شدت کے ساتھ اضافہ کردیا ہے۔

ڈیرہ بگٹی میں گیس پائپ لائن دھماکے سے اڑا دی گئی۔

ڈیرہ بگٹی میں فوج پر دو بم حملوں میں گیارہ اہلکار ہلاک کیئے، بی آر اے

گوادر میں مسلح افراد کا کریش پلانٹ پر حملہ، گارڈ جاں بحق

پچھلے ایک مہینے کے اندر نصیر آباد اور ڈیرہ بگٹی سے متصل پنجاب کے ضلع روجھان میں ریل گاڈیوں کو بم دھماکوں اور فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ڈیرہ بگٹی میں گیس تنصیبات کو اڑانے کے ساتھ ساتھ ڈیرہ بگٹی، نصیر آباد، کیچ میں پاکستانی فوج پر مسلح مزاحمت کاروں کے حملوں میں شدت کے ساتھ اضافہ ہوا ہے۔

ریل گاڈیوں اور گیس تنصیبات کو اڑانے کی زمہ داری بلوچ ریپبلکن آرمی اور بلوچ لبریشن ٹائیگرز قبول کرتی رہی ہیں۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Back to top button