اختر ندیم ساتھیوں سمیت محاز پر موجود ہے۔ بی ایل ایف

کوئٹہ(ریپبلکن نیوز)بلوچستان لبریشن فرنٹ کے ترجمان گہرام بلوچ نے اختر ندیم بلوچ کے ہلاکت کی سرکاری دعوی کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ ریاست کا دعوی جھوٹ پر مبنی ہے ،قومی رہنما اختر ندیم بلوچ محاذ جنگ پر موجود ہیں اور ساتھیوں سمیت سلامت ہیں۔ دراصل ریاستی زمینی و فضائی فوج نے کولواہ میں عام آبادیوں کو نشانہ بنایا ہے۔ جو جنگی جرم ہے اور عالمی قوانین کی منافی ہے۔ درجنوں گھروں کو نذر آتش کیا گیا اورکئی افراد لاپتہ کیے گئے۔ ان جنگی جرائم پر پاکستان کو قانون کے کٹہرے میں لانا چاہئے۔ یکم اگست کو پاکستان کی چھ جنگی ہیلی کاپٹروں نے کولواہ میں عام آبادی اور سڑکوں کو نشانہ بنایا۔ ترجمان نے کہا کہ کل سرمچاروں نے کل رات تربت میں غلام نبی پمپ پر قائم آرمی چیک پوسٹ پر دستی بم حملہ کرکے فورسز کو جانی نقصان پہنچایا۔ کل ہی کیچ کے علاقے گومازی میں دو بارودی سرنگ بچھا کر دو اہلکاروں کو اْس وقت ہلاک کیا جب وہ گومازی چیک پوسٹ سے نکل کر ندی میں اپنے مورچوں کی جانب جا رہے تھے۔ پہلا دھماکہ سہہ پہر اور دوسرا مغرب کے وقت ہوا ہے۔ بلیدہ میں آرمی کی بٹ کیمپ پر خودکار بھاری ہتھیاروں سے حملہ کرکے فورسز کوجانی و مالی نقصان پہنچایا۔مقبوضہ بلوچستان میں ریاستی فورسز پر حملے آزاری تک جاری رہیں گے

مزید خبریں اسی بارے میں

Close