جیئے سندھ قومی محاذ کی جانب سے نوابشاہ میں سندھ مانگتا ہے آزادی کے نام سے آزادی مارچ

نیوز ڈیسک (ریپبلکن نیوز) جسقم بشیر خان کا نوابشاھ میں آزادی مارچ ، لاپتہ کارکنان کو آزاد کیا جائے، سندھ پاکستان سے آزادی چاہتا ہے ۔

سندھ کی بڑی آزادی پسند پارٹی جیئے سندھ قومی محاذ کی جانب سے آج نوابشاہ شہر میں سندھ مانگتا ہے آزادی کے نام سے آزادی مارچ کیا گیا، جس کی رہنمائی جسقم کے مرکزی رہنما علی رضاخاخیلی ، سرفرازمیمن ، ساگرحنیف بڑدی اور دیگر رہنماؤں نے کی جس میں جسقم سمیت دیگر قومپرست پارٹیوں کے کارکنان اور عام لوگ ہزاروں کی تعداد میں شریک ہوگئے ۔

اس موقع پر جسقم کارکنان نے سندھ مانگتی ہے آزادی ، پاکستان نہیں چاہیئے ، کالاباغ ڈئم نہیں چاہیئے کے زوردار نعرے لگارہے تھے۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے جسقم رہنماؤں نے کہا کہ سندھ بھر سے پاکستان کی ریاستی ایجنسیوں نے سیکڑوں کی تعداد میں جیئے سندھ کے کارکنان کو اٹھاکر لاپتہ کردیا ہے ، ہم ان سب کارکنان کی آزادی کا مطالبہ کرتے ہیں ، اس کے ساتھ ہمارے احتجاج کا مقصد یہ ہے کہ سندھ کے سارے وسائل سندھ دھرتی کے باسیوں کے حوالے کیئے جائیں ، پاکستانی ریاست کی جانب سے سندھ کے وسائل کی لوٹ مار ہم برداشت نہیں کریں گے۔سندھ میں کالونائیز کیئے گیے سارے غیرسندھیوں کو سندھ کی دھرتی سے نکال کر اپنے اپنے ملک بھیجا جائے۔

رہنماؤں نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ سندھ پاکستان میں مقبوضہ دھرتی بنائی گئی ہے ، ہم سندھی پاکستان میں کبھی بھی غلام بن کر نہیں رہیں گے۔ سندھ پاکستان سے آزادی چاہتی ہے اور ہم اپنے وطن سندھ کی آزادی کے لیئے رہبر سندھ سائیں جی ایم سید کے فکر تحت پرامن سیاسی جدوجھدجاری رکھیں گے۔

متعلقہ عنوانات

مزید خبریں اسی بارے میں

Close