5لاکھ افغان مہاجرین کو شناختی کارڈز کے اجراء سے متعلق پارٹی کے جو خدشات و تحفظات کئی سالوں سے تھے وہ درست ثابت ہوئے.بی این پی

BNPکوئٹہ (ری پبلکن نیوز) بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی بیان میں کہا گیا ہے کہ ساڑھے 5لاکھ افغان مہاجرین کو شناختی کارڈز کے اجراء سے متعلق پارٹی کے جو خدشات و تحفظات کئی سالوں سے تھے وہ درست ثابت ہوئے جب ہم حکمرانوں کو کہتے تھے کہ بلوچستان میں لاکھوں مہاجرین خاندانوں کو شناختی کارڈز ‘ پاسپورٹ جاری کئے جا رہے ہیں تو حکومت ٹس سے مس نہیں ہو رہی ہے چاہے وہ آمر ہو یا سول ڈکٹیٹروں کی حکومت یہ بات ماننے کو تیار نہیں تھے لیکن اب جب طالبان کے سربراہ کے شناختی کارڈز قلعہ عبداللہ سے بنایا گیا تھا اور کئی نادرا افسران ‘ اہلکاروں کی گرفتاری ہوئی اور بہت سے لوگوں کو سزائیں دی گئیں اس کے بعد بھی ہم کہہ رہے تھے کہ شناختی کارڈز کی تصدیق کرائی جائے اور جوائنٹ انسویسٹی گیشن کے ذریعے باریک بینی کے ساتھ جانچ پڑتال کی جائے اور بلا رنگ و نسل غیر ملکیوں کے تمام نام نکال کر معلومات عوام کے سامنے عیاں ہیں بلوچستان حکومت کی مشینری گزشتہ تین سالوں سے استعمال ہو رہی ہے اب جبکہ ڈی جی نادرا کے خط نے جو حکمران جماعت کے حوالے سے تھا یہ جماعت تو عرصہ دراز سے افغان مہاجرین کے شناختی کارڈز کے حوالے سے نادرا آفس کے سامنے احتجاج کرتے دکھائی دیتے ہیں مرکزی و صوبائی حکومت پر دباؤ تھا کہ پشتونوں کے شناختی کارڈز کے آڑ میں افغان مہاجرین کے شناختی کارڈز جاری کروانے کیلئے دباؤ ڈالتے تھے اور بلاک شدہ شناختی کارڈز کے اجراء کو یقینی بنانے کیلئے ڈاکٹر مالک کے دور میں صوبائی اسمبلی میں قرارداد پیش کی اس دور کے صوبائی حکومت نے بھی کافی مدد کی اب جبکہ تمام شواہد ‘ ثبوت اور لاکھوں کی تعداد میں جعلی شناختی کارڈز کے اجراء کے انکشافات ہوئے تو اب بھی ان کی کوشش ہے کہ افغان مہاجرین کی آباد کاری کو برقرار رکھا جائے مرکزی حکومت کا شناختی کارڈز کی تصدیق کا اقدام خوش آئند ہے مرکزی حکومت شروع سے بی این پی آواز سنتی تو آج لاکھوں کی تعداد میں شناختی کارڈز نہ بنتے حکومت شناختی کارڈز کے تصدیق کا عمل بلا تفریق جلد از جلد شروع کرے اور جعلی شناختی کارڈز کے تمام ریکارڈ سے بلوچستان کے عوام کو آگاہ کیا جائے تاکہ بلوچستانیوں کو پتہ چل سکے کہ مہاجرین نے کس طریقے سے جعلی شناختی کارڈز بنائے یہ کونسے لوگ تھے جنہوں نے انہیں جعلی شناختی کارڈز بنا کر دیئے بی این پی بلوچستان میں ترقی پسند روشن خیال سیاسی قوت ہے ہم سمجھتے ہیں کہ افغان مہاجرین نا صرف بلوچوں بلکہ پشتونوں مقامی تمام اقوام کے لئے مسائل کا سبب بنیں گے ۔

مزید خبریں اسی بارے میں

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker